پیرس حملہ آور منشیات اور شراب کے نشے میں تھا

Paris Hamla Awar Manishiyat Aur Shrab Kay Nashey Mein Tha

پیرس کےاورلی ایئرپورٹ پرفوجی کی بندوق چھیننے کی کوشش میں مارا گیا زید بن بلقاسم اس وقت منشیات اور شراب کے نشے میں تھا۔

غیر ملکی خبر ایجنسی نے فرانسیسی جوڈیشل ذرائع کے حوالے سے خبر دی ہے کہ زید بن بلقاسم ہفتے کے روز نشے میں تھا۔ زید بن بلقاسم کی پوسٹ مارٹم رپورٹ آ گئی ہے،جس میں انکشاف ہوا ہے کہ زید بن بلقاسم کے خون میں شراب اور کوکین پائی گئی۔

اس سے پہلے زید کے والد نے بھی کہا تھا کہ ان کا بیٹا دہشت گرد نہیں تھا بلکہ وہ نشے میں تھا ۔

زید کے والد کا کہنا تھا کہ ان کا بیٹا اس سے قبل چوری کے جرم میں جیل جاچکا تھا تاہم وہ دہشت گرد ہرگز نہیں تھا ۔ اس دن بھی وہ نشے اور منشیات کے زیر اثر تھا ۔

اس سے پہلے پراسیکیوٹرکاکہناہےکہ ملزم نے نعرہ لگایا تھا کہ وہ اللہ کی راہ میں جان دے گا۔

تیونس سےتعلق رکھنےوالے زید کے والد، بھائی اور کزن کو ہفتے کے روز پوچھ گچھ کے لیے حراست میں لیا گیا تھا ۔تاہم بعد میں تینوں کو رہا کر دیا گیا ۔