Can't connect right now! retry
Advertisement

خصوصی رپورٹس
16 مئی ، 2017

اظہر علی کو ون ڈے ٹیم کا کپتان بنانا ،میرا فیصلہ نہیں تھا، شہریار خان

اظہر علی کو ون ڈے ٹیم کا کپتان بنانا ،میرا فیصلہ نہیں تھا، شہریار خان

پاکستان کرکٹ بورڈ کے سربراہ شہریار خان کا کہنا ہے کہ ون ڈے کرکٹ میں اظہر علی کو کپتان مقرر کرنا ان کا فیصلہ نہیں تھا۔

شہریار خان نے جیو نیوز کے پروگرام ’اسکور‘ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سفید گیند سے کھیلی جانے والی ون ڈے کرکٹ میں انھیں سابق کپتان،کوچ ،بورڈ کے عہدیداروں، سلیکٹرز ، چیف سلیکٹر اورسینئر کھلاڑیوں نے مشورہ دیا کہ اظہر علی کو کپتان بنایا جائے اور ٹیسٹ کرکٹ میں انھیں نائب کپتان مقرر کیا جائے۔

چیئر مین پی سی بی نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اظہر علی کو ون ڈے ٹیم کی قیادت دینے کا تجربہ ناکام ہوگیا۔

شہریار خان کا کہنا تھا کہ’ اظہر علی ایک محتاط انداز رکھنے والے کپتان ثابت ہوئے۔ان کی شخصیت میں عمران خان اور مصباح الحق جیسے کپتان کی طرح نہیں تھی لہٰذا میں انھیں لایا اور کہا کہ کپتانی کے سبب آپ کی انفرادی بیٹنگ متاثر ہو رہی ہے،آپ قیادت سے دست بردار ہو جائیں ،یہ ذمہ داری ہم سرفراز احمد کو سونپنا چاہتے ہیں۔

شہریار خان نے اعتراف کیا کہ اظہر علی جو ایک نفیس انسان ہیں ،ہمارے اس فیصلے سے دل برداشتہ ہوگئےاور انہوں نے کہا کہ وہ ٹیسٹ ٹیم کی نائب کپتانی بھی چھوڑنا چاہتے ہیں جسے ہم نے قبول کر لیا۔

اکتیس مارچ 2015ء کو لاہور میں شہریار خان نے مصباح الحق کی ون ڈے کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے بعد اظہر علی کو اس وقت کپتان بنانے کا اعلان کیا تھاجب اظہر ون ڈے ٹیم میں بھی شامل نہ تھے۔

بطور کپتان اظہر علی کو بنگلہ دیش میں کھیلی جانے والی پہلی ون ڈے سیریز میں تین صفر سے شکست کا کڑوا گھونٹ پینا پڑا تھا۔

اظہر علی نے 31ون ڈے میچوں میں پاکستان کی قیادت کی جہاں 18میچوں میں انھیں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔بطور کپتان اظہر علی 12میچوں میں کامیاب رہے۔

Advertisement