-----

سپریم کورٹ کا حسین نواز کی تصویر لیک کے ذمہ دار کا نام سامنے لانے کا حکم

Hussain Nawaz Plea Final

سپریم کورٹ کے پاناما عملدرآمد کیس کے بینچ نے حسین نواز کی تصویر لیک کرنے والے شخص کا نام سامنے لانے کا حکم دیا ہے۔

سپریم کورٹ نے تصویر لیک کے معاملے پر وزیراعظم کے صاحبزادے حسین نواز کی کمیشن بنانے کی درخواست نمٹا دی۔

اس موقع پر عملدرآمد بینچ کے سربراہ جسٹس اعجاز افضل نے حکم دیا کہ حسین نواز کی تصویر لیک کرنے والے شخص کا نام سامنے لایا جائے۔

جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس میں کہا کہ اگر حکومت تصویر لیک کے معاملے پر کمیشن بنانے میں دلچسپی رکھتی ہے تو بنا لے ، تصویر لیک پر کمیشن عدالتی دائرہ کار سے باہر ہے۔

جسٹس شیخ عظمت سعید نے ریمارکس میں کہا کہ تصویر لیک کا ذمےدار اور نام عام کرنے کا اختیار وفاق کو دیا گیا ہے، حکومت عدالتی کندھا استعمال نہ کرے۔

خیال رہے کہ حسین نواز کی یکم جون کو جے آئی ٹی کے سامنے تیسری پیشی کے بعد ایک تصویر منظرعام پر آئی تھی جس میں انہیں انویسٹی گیشن روم میں اکیلا بیٹھے دیکھا جاسکتا تھا۔