Can't connect right now! retry
Advertisement

پاکستان
11 نومبر ، 2017

میرے خلاف تحقیقات سیاسی مقاصد کیلئے تھیں، فرد جرم پر نوازشریف کا جواب

اسلام آباد: سابق وزیراعظم نواز شریف نے نیب ریفرنسز پر فرد جرم کے جواب میں کہا ہےکہ میرے خلاف تحقیقات سیاسی مقاصد کے لئے تھیں۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت نے پاناما کیس کے فیصلے کی روشنی میں دائر نیب ریفرنسز پر میاں نوازشریف پر نمائندے کے بعد ذاتی طور پر فرد جرم عائد کردی جب کہ سابق وزیراعظم نے صحت جرم سے انکار کرتے ہوئے اپنا جواب عدالت میں جمع کرایا۔

نیب ریفرنسز کی چارج شیٹ کے جواب میں نواز شریف کے بیان کی کاپی جیو نیوز نے حاصل کر لی ہے۔

نواز شریف نے اپنے جواب میں کہا کہ ریفرنسز میں لگائے گئے الزامات بے بنیاد ہیں اس لیے الزامات کی صحت سے انکار کرتا ہوں، میرے خلاف ہونے والی تحقیقات قواعد کے خلاف اور سیاسی مقاصد کے لیے تھیں۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ آئین کا آرٹیکل 10 اے ہر شہری کو فیئر ٹرائل کا حق دیتا ہے لیکن عدالتی حکم نامے کی روشنی میں دائرعبوری ریفرنسز میں فیئر ٹرائل کا حق نہیں دیا جا رہا، سپریم کورٹ کے 7 نومبر کے فیصلے میں سخت آبزرویشن دی گئی۔

نواز شریف نے چارج شیٹ کے جواب میں کہا کہ میرے خلاف دائر مقدمات میں مانیٹرنگ جج کی تعیناتی سے آئینی حقوق متاثر ہو رہے ہیں لیکن ریفرنسز میں الزامات کا دفاع کروں گا۔

واضح رہےکہ نیب نے شریف خاندان کے خلاف لندن پراپرٹیز، العزیزیہ مل اور فلیگ شپ انویسٹمنٹ کے تین ریفرنسز دائر کیے ہیں۔

Advertisement