Can't connect right now! retry

دنیا
10 فروری ، 2018

شامی فوج نے اسرائیلی ایف 16 طیارہ مار گرایا

اسرائلی ایف 16 طیارے کی تباہی کا منظر — فوٹو: اے ایف پی

شامی فوج نے اپنی فضائی حدود کی خلاف ورزی کرنے والے اسرائیلی ایف 16 طیارے کو مار گرایا۔ 

اسرائیل کا کہنا ہے کہ شام کی سرزمین سے اڑنے والے ایک ایرانی ڈرون طیارے نے اسرائیلی حدود کی خلاف ورزی کی جس کا جنگی ہیلی کاپٹر نے کامیابی سے تعاقب کیا۔ 

اسرائیلی فوج کے ترجمان کا کہنا ہے کہ اسرائیلی ایئرفورس نے شام سے ڈرون طیارے بھیجنے والے ایرانی کنٹرول سسٹم کو ہدف بنایا لیکن اس دوران ایک ایف 16 ایئر فائر کا نشانہ بن کر گر گیا۔

اسرائیلی میڈیا کے مطابق ایف 16 طیارہ شمالی اسرائیل میں گر کر تباہ ہوا۔ 

شامی ذرائع ابلاغ نے بھی اسرائیل کی جانب سے فضائی حدود کی خلاف ورزی پر طیارہ مار گرانے کے واقعے کی تصدیق کی ہے۔

قطر کے الجزیرہ ٹی وی کی صحافی کا کہنا ہے کہ یہ پہلا موقع ہے جب اسرائیل نے یہ تسلیم کیا ہے کہ اس کے طیاروں نے شام میں حملے کیے ہیں۔

شام کے سرکاری ٹی وی نے بعد ازاں ایک فوجی اہلکار کے حوالے سے بتایا کہ اسرائیل نے ملک کے وسطی علاقے میں قائم فوجی چھاؤنی کو نشانہ بنایا جس کے جواب میں شام نے ایک سے زیادہ طیارے مار گرائے۔

الجزیرہ ٹی وی نے اپنے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ اسرائیلی حملوں میں شامی فوج کو جانی نقصان ہوا ہے۔

طیارہ گرائے جانے کے بعد اسرائیل کی جوابی کارروائی

اسرائیلی فوج کا کہنا ہے کہ شام میں اس کا جنگی طیارہ گرائے جانے کے بعد انہوں نے شامی فضائی دفاع کو بھاری نقصان پہنچایا ہے۔

اسرائیلی فضائیہ کے سینئر افسر جنرل تومر بار نے بتایا کہ 1982 کی لبنان جنگ کے بعد شام پر یہ اپنی نوعیت کا شدید حملہ تھا۔

انہوں نے اس بات کا بھی اعتراف کیا کہ ایرانی ڈرون کی کے پیچھے جانے والا اسرائیلی ایف 16 طیارہ فضائی آپریشن کے دوران فائرنگ کی زد میں آیا البتہ طیارے میں موجود دونوں پائلٹس طیارے کے شمالی اسرائیل میں تباہ ہونے سے پہلے ہی بحفاظت نکل گئے تھے۔

اسرائیل کے مطابق طیارہ تباہ ہونے کے بعد اسرائیلی فضائیہ نے دوبارہ حملہ کیا جس میں شامی و ایرانی فوجی اہداف کو نشانہ بنایا گیا۔

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM