Can't connect right now! retry

کھیل
04 دسمبر ، 2018

ابوظہبی ٹیسٹ: دوسرے روز پاکستان نے 3 وکٹوں کے نقصان پر 139 رنز بنالیے

حارث سہیل 34، امام الحق 9 اور محمد حفیظ بغیر کوئی رنز بنائے آؤٹ ہوئے۔ فوٹو: بشکریہ پی سی بی

ابوظہبی ٹیسٹ میں پاکستان کی نیوزی لینڈ کیخلاف بیٹنگ جاری ہے اور کھیل  کے دوسرے روز قومی ٹیم نے 3 وکٹوں کے نقصان پر 139 رنز بنا لیے ہیں۔

شیخ زید اسٹیڈیم میں کھیلے جارہے میچ میں نیوزی لینڈ کی پوری ٹیم اپنی پہلی اننگز میں 274 رنز بناسکی جس کے جواب میں سرفراز الیون کی بیٹنگ جاری ہے اور قومی ٹیم نے دوسرے روز کھیل کے اختتام پر 3 وکٹوں کے نقصان پر 139 رنز بنالیے ہیں۔

پاکستان کی جانب سے پہلی اننگز کا آغاز اوپننگ بلے باز محمد حفیظ اور امام الحق نے کیا تو دوسرے اوور کی چوتھی گیند پر حفیظ بغیر کوئی رنز بنائے ٹرینٹ بولٹ کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے۔

امام الحق بھی زیادہ دیر کریز پر نہ رک سکے اور 9 رنز کے مہمان ثابت ہوئے، تیسری وکٹ پر حارث سہیل اور اظہر علی نے ٹیم کو سہارا دیا اور مجموعی اسکور 85 تک پہنچا تو حارث ٹم ساؤتھی کا شکار بن گئے، وہ 34 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

حارث سہیل کے آؤٹ ہونے کے بعد اظہر علی اور اسد شفیق نے ذمہ دارانہ بلے بازی کرتے ہوئے بغیر کوئی وکٹ کھوئے ٹیم کا اسکور 139 رنز تک پہنچایا۔

دوسرے روز کا کھیل ختم ہوا تو اظہر علی 62 اور اسد شفیق 26 رنز کے ساتھ وکٹ پر موجود تھے اور دونوں کھلاڑیوں کے درمیان 54 رنز کی شراکت قائم ہو چکی ہے۔

دوسرے دن کا کھیل ختم ہونے پر کیویز کو قومی ٹیم پر 135 کی برتری حاصل ہے جب کہ 3 دن کا کھیل باقی ہے۔

اس سے قبل ٹیسٹ کے دوسرے روز کا کھیل شروع ہوا تو وکٹ کیپر بلے باز واٹلنگ 42 اور ولیم سومرویلے 12 رنز کے ساتھ کریز پر موجود تھے، دونوں بلے بازوں نے محتاط انداز اپنایا لیکن 77 رنز پر ناٹ آؤٹ رہنے والے واٹلنگ کے ساتھ کریز پر کوئی زیادہ دیر نہ ٹھہر سکا۔

سومرویلے 12، اعجاز پٹیل 6 اور ٹرینٹ بولٹ ایک رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

پاکستان کی جانب سے بلال آصف نے شاندار بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 5 وکٹیں حاصل کیں، جب کہ یاسر شاہ نے 3، حسن علی اور شاہین شاہ آفریدی نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

لیگ اسپنر یاسر شاہ کم ٹیسٹ میچز میں 200 وکٹیں حاصل کرنے کا ریکارڈ بنانے سے 2 وکٹیں دوری پر ہیں، انہیں یہ ریکارڈ بنانے کے لیے اگلی اننگز کا انتظار کرنا ہوگا۔  

یاد رہے کہ یاسر شاہ اب تک 33 میچز میں 198 وکٹیں حاصل کرچکے ہیں اور انہیں 200 کا ہندسہ پورا کرنے میں مزید 2 وکٹیں درکار ہیں، اس سے قبل آسٹریلوی لیگ اسپنر کلیری گرمٹ نے 1936 میں 36 ٹیسٹ میچز میں 200 وکٹیں مکمل کی تھیں۔

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM