Can't connect right now! retry

صحت و سائنس
21 جنوری ، 2020

تناؤ اور جِلد کے مسائل کے درمیان حیران کُن تعلق

فوٹو: فائل

موجودہ دور میں تناؤ ہم سب کی زندگیوں کا ایک حصہ بن گیا ہے تو ایسا کہنا غلط نہیں ہوگا کہ ہم سب لوگ اپنی زندگیوں میں کسی نا کسی وجہ سے ذہنی تناؤ کا شکار رہتے ہیں۔

ذہنی تناؤ کا ہمارے پورے جسم پر گہرا اثر پڑتا ہے، اگر کوئی انسان مسلسل ذہنی تناؤ کی کیفیت میں مبتلا رہتا ہے تو یہ اس کے قوتِ مدافعت کے نظام، نظامِ ہاضمہ، میٹابولزم اور ہارمونس کے لیے بھی نقصان دہ ثابت ہوسکتا ہے۔

علاوہ ازیں مسلسل ذہنی تناؤ کی کیفیت امراضِ قلب، موٹاپا، ڈپریشن اور دماغی بیماریوں کا بھی باعث بن سکتی ہے۔

فوٹو: فائل

اگرچہ ہم میں سے بہت ہی کم لوگ اس حقیقت سے واقف ہوں گے کہ تناؤ اور جِلد کا براہِ راست تعلق ہے، اگر آپ کو اپنی جِلد ضرورت سے زیادہ خشک یا چہرے پر ریشز نظر آنے لگیں تو ہوسکتا ہے کہ اس مسئلے کی ایک وجہ تناؤ ہو۔

ذہنی تناؤ اور جِلد کے مسائل کے مابین تعلق

آپ کو یہ بات تو معلوم ہی ہوگی کہ تناؤ کا ہماری دماغی صحت پر کیا اثر پڑتا ہے، لیکن کیا آپ یہ جانتے ہیں کہ اچانک سے صاف ستھری جِلد پر ایک پمپل (دانہ) نکل آئے تو اس کی ایک وجہ تناؤ بھی ہوسکتی ہے۔

مسلسل تناؤ کی کیفیت مبتلا رہنے کی وجہ سے جِلد کے مسائل ہونا شروع ہوجاتے ہیں۔

کولمبیا ایشیا اسپتال کی ماہرِ جِلد ڈاکٹر کسومیکا کاناک کا کہنا ہے کہ جب کوئی بھی شخص تناؤ کی کیفیت میں مبتلا ہوتا ہے تو اس کے جسم میں ایڈرینالِن پیدا ہوتا ہے جو جِلد کو حساس بنا دیتا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ تناؤ نا صرف جِلد کے مسائل کا باعث بنتا ہے بلکہ اگر آپ کو پہلے ہی جِلد سے متعلق مسائل کا سامنا ہے تو تناؤ کی وجہ سے صورتحال مزید خراب ہوسکتی ہے۔

تناؤ پر قابو پانے کا سب سے بہترین حل مراقبہ اور یوگا ہے، اپنے دن میں سے کچھ وقت نکال کر مراقبہ اور یوگا کرنے سے اس کیفیت پر قابو پایا جا سکتا ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM