Can't connect right now! retry

دنیا
03 اپریل ، 2020

کورونا وائرس: ڈاکٹر کے بعد پاکستانی نژاد برطانوی نرس اریما بھی چل بسیں

نرس اریما نسرین تین بچوں کی ماں تھیں اور ان میں 23 مارچ کو کورونا وائرس کی علامات ظاہر ہوئی تھیں۔ فوٹو: فائل

لندن: ڈاکٹر کے بعد خطرناک عالمی وبا کورونا وائرس میں مبتلا پاکستانی نژاد برطانوی نرس اریما نسرین بھی انتقال کر گئیں۔

برطانوی میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستانی نژاد برطانوی نرس اریما نسرین کا انتقال والسال مینر اسپتال میں ہوا جہاں وہ 16 برس سے نیشنل ہیلتھ سروسز (این ایچ ایس) کے لیے اپنی خدمات پیش کر رہی تھیں۔

نرس اریما نسرین تین بچوں کی ماں تھیں جن میں 23 مارچ کو کورونا وائرس کی علامات ظاہر ہوئی تھیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق اریما نسرین برطانیہ کی بہن کزیمہ نسرین کا کہنا ہے کہ جب اریما میں کورونا کی علامات ظاہر ہوئیں تو اس وقت وہ جسمانی طور پر صحت مند تھی، لوگ کورونا وائرس کو سنجیدہ نہیں لے رہے لیکن یہ بہت ہی خطرناک ہے کیونکہ جب اریما کو وینٹی لینٹر پر رکھا گیا تو اس وقت ان کی عمر صرف 36 برس تھی۔

کورونا کے ہاتھوں زندگی کی بازی ہارنے والی اریما کی قریبی دوست روبی اختر نے سوشل میڈیا پر اپنی دوست کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ وہ بہت پیار کرنے والی اور ملنسار لڑکی تھی۔  

برطانیہ میں کورونا وائرس کی صورتحال

برطانیہ میں کورونا وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد 2 ہزار 900 سے تجاوز کر چکی ہے جب کہ وائرس سے متاثرہ افراد 33 ہزار 700 سے زائد ہیں۔

دنیا بھر میں کورونا وائرس کی صورتحال

عالمگیر وبا کورونا وائرس کے باعث دنیا بھر میں اب تک 53 ہزار سے زائد جانیں ضائع ہو چکی ہیں جب کہ 10 لاکھ سے زیادہ افراد اس وبا سے متاثر ہو چکے ہیں

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM