Can't connect right now! retry

دنیا
01 جولائی ، 2020

برطانوی فوج نے گھٹنے ٹیک کر اظہارِ یکجہتی کرنے پر پابندی عائد کردی

فوٹو: بشکریہ ڈیلی میل

برطانوی فوج نے اپنے اہلکاروں پر  بلیک لائفس کی تحریک کے ساتھ اظہارِ یکجہتی کے دوران گھٹنے ٹیکنے پر پابندی عائد کردی ہے۔

کمانڈرز نے ہیمپشائر کے گوسپورٹ میں واقع ایچ ایم ایس سلطان کے فوجیوں کو متنبہ کیا ہے کہ جب وردی میں ہوں تو وہ اظہار یکجہتی کے لیے گھٹنے نہیں ٹیک سکتے۔

برطانوی ملٹری کے ذرائع کا کہنا  ہے کہ جب  فوجی وردی میں ہوں تو  انہیں کسی بھی قسم کی سیاسی سرگرمی میں حصہ لینے کی اجازت نہیں ہے کیونکہ بلیک لائفس کی تحریک کے ساتھ اظہارِ یکجہتی کے لیے گھٹنے ٹیکنا ایک سیاسی تحریک بن رہی ہے۔

ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ جب بھی فوجی وردی میں ہوں تو  انہیں  کیسے رہنا ہے، اس کے بے شمار اصول ہیں، مسلح افواج اور وزارت دفاع نسل پرستی کے خلاف ہیں اور وہ اس کو ختم کرنا چاہتے ہیں۔

یہ فیصلہ اس وقت سامنے آیا جب گزشتہ ماہ میٹروپولیٹین پولیس نے اپنے افسروں کو بیلک لائفس کی تحریک کے احتجاج کے دوران گھٹنے ٹیکنے کے عمل کو سبز جھنڈی دکھائی تھی۔

بعدازاں لندن میں نسل پرستی کے خلاف احتجاج کے دوران حمایت میں متعدد افسران نے یہ ہی مؤقف اپنایا۔ 

اس ضمن میں دفاعی عہدیدار کا کہنا ہے کہ وہ فی الحال اس پالیسی پر نظرثانی کر رہے ہیں کہ آیا اس کا کوئی دوسرا راستہ نکل سکتا ہے یا نہیں اور وہ اظہار یکجہتی کے لیے کوئی دوسرا طریقہ اپنا سکیں۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM