Can't connect right now! retry
پاکستان
Saturday Oct 03 2020

2018 کے الیکشن میں این اے 244 سے علی زیدی نہیں مفتاح اسماعیل جیتے تھے: سعید غنی

فوٹو: فائل

وفاقی وزیر علی زیدی کے خلاف پیپلز پارٹی کے سعید غنی اور مسلم لیگ ن کے مفتاح اسماعیل ایک ہوگئے۔

ٹوئٹر پر مسلم لیگ ن کے گذشتہ دور حکومت کے وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل اور تحریک انصاف کے رہنما اور وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی کے درمیان ملک میں گیس کے بحران اور ایل این جی ٹرمینل معاہدوں کے حوالے سے بحث جاری تھی کہ ایک صارف نے تبصرہ کیا کہ علی زیدی نے مفتاح اسماعیل کے مقابل الیکشن جیتا تھا تاہم مفتاح جیسے کسی امیدوار کا جیتنا کراچی کے لیے بہتر ہوسکتا تھا۔

اس صارف کی ٹوئٹ ری ٹوئٹ کرتے ہوئے مفتاح اسماعیل نے کہا کہ 'دراصل آر ٹی ایس کی وجہ سے، ورنہ اسی حلقے سے صوبائی اسمبلی کی نشست جیتنے والے سعید غنی جانتے ہیں کہ اصل میں کون جیتا تھا'۔

پیپلز پارٹی کے رہنما اور صوبائی وزیر تعلیم بھی مفتاح اسماعیل کی حمایت میں آگئے اور کہا کہ میں جانتا ہوں کہ مفتاح اسماعیل جیتے تھے لیکن کراچی میں پی ٹی آئی کے دیگر امیدواروں کی طرح یہ سیٹ بھی علی زیدی نے جیت لی۔

اس پرایک صارف نے جواب دیاکہ اگر دھاندلی ہوئی تھی تو سعید غنی صوبائی نشست سے کیسے جیت گئے؟

خیال رہے کہ الیکشن 2018 میں قومی اسمبلی کی نشست این اے 244 سے تحریک انصاف کے علی زیدی 69 ہزار 475 ووٹ لےکرکامیاب ہوئے تھے جب کہ ن لیگ کے مفتاح اسماعیل 31 ہزار247 ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر رہے تھے۔

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM