Can't connect right now! retry

دنیا
24 اکتوبر ، 2020

امریکی انتخابات میں خلاء سے کیسے ووٹ ڈالا گیا؟

فوٹو: بشکریہ ناسا ٹوئٹر اکاؤنٹ

امریکی خلاء باز نے انتخابات کے دوران خلاء سے اپنا ووٹ کاسٹ کیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق انٹرنیشنل اسپیس سینٹر کی کریو ممبر امریکی خاتون خلاء باز کیٹ ریوبنس نے امریکی انتخابات میں خلاء سے حصہ لیا اور اپنا ووٹ کاسٹ کیا۔

امریکی خاتون خلاء باز نے امریکی صدارتی انتخابات میں زمین سے 408 کلو میٹر بلندی میں خلاء سے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا جس کی تصدیق امریکی خلائی ادارے ناسا کی جانب سے بھی کی گئی ہے۔

ناسا کے مطابق خاتون خلاء باز نے اپنا 6 ماہ کا مشن ایک ہفتے قبل ہی شروع کیا ہے اور انہوں نے اس دوران خلاء سے ووٹ دیا۔

ناسا کے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر خاتون کی ووٹ کاسٹ کرنے سے قبل کی تصویر بھی جاری کی گئی ہے جس میں دیکھا جاسکتا ہےکہ صفر کشش ثقل کے ماحول میں موجود خلاء باز ایک بوتھ کے پاس کھڑی ہیں جس پر لگے ایک پرچے پر آئی ایس ایس یعنی انٹرنیشنل اسپیس سینٹر ووٹنگ بوتھ لکھا ہواہے۔

ناسا اور خاتون خلاء باز نے خلاء سے ووٹ دینے کے اس عمل کو غیر حاضر ووٹنگ قرار دیاہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق خلاء سے ووٹنگ کے لیے ناسا کے جانسن اسپیس سینٹر ہیوسٹن کی جانب سے ایک محفوظ الیکٹرانک بیلٹ بنایا گیا ہے جس کے ذریعے خاتون خلاء باز نے ای میل میں اس الیکٹرانک بیلٹ کے لنک سے اپنا ووٹ کاسٹ کیا۔

غیر ملکی میڈیا کا کہنا ہےکہ خاتون خلاء باز کی جانب سے خلاء سے ووٹنگ کے عمل کا یہ تجربہ پہلی مرتبہ نہیں بلکہ کیٹ ریوبنس 2016 میں بھی انٹرنیشنل اسپیس سینٹر سے اپنا ووٹ کاسٹ کرچکی ہیں۔

امریکی کانگریس نے 1997 میں اس حوالے سے ایک قانون پاس کیا تھا جس میں خلاء سے ووٹ دینے کے عمل کو ممکن بنایا گیا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM