Can't connect right now! retry

دنیا
24 جون ، 2021

بھارت کی من پسندکشمیری قیادت نے بھی آرٹیکل 370 کی بحالی کا مطالبہ کردیا

مقبوضہ کشمیر پر مودی سرکار کی چال ناکام ہوگئی اور وادی میں رچایا جانے والا نیا ڈرامہ فلاپ ہوگیا۔

بھارت کی جانب سے اصل کشمیری قیادت چھوڑ کر جن کشمیری رہنماؤں کو  نام نہادکل جماعتی کانفرنس میں بلایا گیا انہوں نے بھی  یک زبان ہوکر آرٹیکل 370 کی بحالی کا مطالبہ کردیا۔

کشمیری رہنماؤں کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت فوراً بحال کی جائے۔ 

بھارتی وزیراعظم نےکشمیری رہنماؤں کو نئے انتخابات اور نئی حلقہ بندیوں پر راضی کرنے کی کوشش  بھی کی۔

سابق وزیراعلی محبوبہ مفتی نے مودی کو پاکستان سے بات کرنے کا مشورہ دیتے ہوئےکہا کہ دلی سرکار جب طالبان سے بات کرسکتی ہے تو پاکستان سے کیوں نہیں؟

 عمر عبداللہ نے بھی مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت بحال کرنے کا مطالبہ کردیا۔

دوسری جانب مقبوضہ کشمیر کی حریت قیادت نے نام نہاد آل پارٹیز کانفرنس کو عالمی برادری کو چکمہ دینے کی کوشش قرار دے دیا۔

ادھر مغربی بنگال کی وزیراعلی ممتا بنرجی نے بھی نریندر مودی کو آئینہ دکھادیا اورکہا کہ آرٹیکل 370 ختم کرنے سے ملک کا نام داغدار ہوا،کانگریس نے بھی مقبوضہ وادی کا درجہ بحال کرنے کا مطالبہ کردیا ہے۔

کشمیریوں کو بے خبر رکھنے کے لیے مقبوضہ وادی میں 48 گھنٹوں کے لیے انٹر نیٹ سروس معطل کردی گئی ۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM