Can't connect right now! retry

پاکستان
02 اگست ، 2021

منی لانڈرنگ کیس، شہباز اور حمزہ کی عبوری ضمانتوں میں 16 اگست تک توسیع

لاہور کی مقامی عدالت نے مبینہ مالیاتی اسیکنڈل میں قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف و صدر مسلم لیگ (ن) شہباز شریف اور پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز کی عبوری ضمانتوں میں 16 اگست تک توسیع کر دی۔

شہباز شریف اور حمزہ شہباز اپنے خلاف ایف آئی اے کے کیس میں ضمانت کیلئے بینکنگ جرائم کورٹ میں پیش ہوئے۔

ڈیوٹی جج ایڈیشنل سیشن جج حامد حسین نے کیس پر سماعت کی۔

ایف آئی اے نے درخواست ضمانت پر اپنا تحریری جواب جمع کرایا جس میں دونوں ملزمان کے بیرون ملک فرار کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے ضمانت خارج کرنے کی استدعا کی گئی۔

تحریری جواب میں ایف آئی اے کا مؤقف تھا کہ لیگی رہنما تفتیش میں تعاون نہیں کر رہے، عبوری ضمانت میں اگر توسیع کی جاتی رہی تو مقدمے کی تفتیش مکمل نہیں ہو سکے گی۔

ایف آئی اے کا کہنا تھاکہ انہوں نے 25 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کی جس کیلئے رمضان شوگر ملز کو استعمال کیا گیا۔

ایف آئی اے نے اپنے جواب میں بتایا کہ شہباز شریف اور حمزہ شہباز نے رمضان شوگر ملز کے کم تنخواہ والے ملازمین کی آڑ میں جعلی بینک اکاؤنٹس بنائے، جعلی اکاؤنٹس کی تفصیلات غریب اکاؤنٹ ہولڈر ملازمین کے اثاثوں سے مطابقت نہیں رکھتیں۔

وفاقی تحقیقاتی ادارے کا کہنا تھاکہ شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی ضمانت سے مرکزی گواہوں کو خطرہ ہو سکتا ہے۔

کیس کی سماعت کے دوران شہباز شریف اور ان کے وکیل نے بتایا کہ قومی اسمبلی کا اجلاس ہے جو 13 اگست تک جاری رہے گا لہٰذا عدالت بعد کی کوئی تاریخ مقرر کرے۔

حمزہ شہباز کے وکیل نے بھی بتایا کہ پنجاب اسمبلی کا اجلاس بھی 13 اگست تک جاری رہے گا۔ 

عدالت نے دونوں کی عبوری ضمانت میں توسیع کرتے ہوئے سماعت 16 اگست تک ملتوی کر دی۔ 

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM