Can't connect right now! retry

دنیا
03 اگست ، 2021

امارات کے ساحل کے قریب تیل بردار بحری جہاز کو ’ہائی جیک‘ کیے جانے کا خدشہ

ایرانی چینل نے دعویٰ کیا ہے کہ تیل بردارجہازفجیرہ کےساحل کےقریب بارودی سرنگ سےٹکرایا ہے— فوٹو: فائل/ اے ایف پی
 ایرانی چینل نے دعویٰ کیا ہے کہ تیل بردارجہازفجیرہ کےساحل کےقریب بارودی سرنگ سےٹکرایا ہے— فوٹو: فائل/ اے ایف پی

متحدہ عرب امارات کی ریاست فجیرہ کےساحل کےقریب تیل برداربحری جہاز کو حادثہ پیش آیا ہے۔

 عرب میڈیا کے مطابق بحری جہاز خلیج عُمان پہنچتےہی کنٹرول سے باہرہوگیا۔ 

اس کے علاوہ ایرانی چینل نے دعویٰ کیا ہے کہ تیل بردار جہاز فجیرہ کے ساحل کے قریب بارودی سرنگ سےٹکرایا ہے البتہ بحری جہازکےعملے کے بارے میں تاحال کوئی اطلاع نہیں ہے۔ 

دوسری جانب برطانوی خبر رساں ایجنسی رائٹرز کا کہنا ہے کہ جہاز رانی سیکیورٹی سے وابستہ تین بڑے ذرائع نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ متحدہ عرب امارات کے ساحل کے قریب ایران کے حمایت یافتہ فورسز نے اس آئل ٹینکر کو قبضے میں لے لیا ہے اور ممکنہ طور پر یہ جہاز ’ہائی جیک‘ کرلیا گیا ہے۔

ان میں سے دو ذرائع کا کہنا ہے کہ جس بحری جہاز کو ’ہائی جیک‘ کیا گیا وہ پانامہ سے تعلق رکھتا ہے جس کا نام اسفالٹ پرنسز ہے اور وہ آبنائے ہرمز کی جانب رواں دواں تھا۔

قبل ازیں ایرانی وزارت خارجہ نے خبردار کیا تھا کہ امارات کے ساحل کے قریب بحری جہازوں کو پیش آنے والے پے در پے حادثات مشکوک ہیں اور ان کا مقصد ممکنہ طور پر ایران کے خلاف جھوٹ پر مبنی ماحول پیدا کرنا ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM