دنیا
17 مئی ، 2022

جاپان کا 2020 کے بعد پہلی بار سیاحوں کو داخلے کی اجازت دینے کا فیصلہ

آغاز میں محدود افراد کو جاپان میں داخلے کی اجازت ہوگی / فائل فوٹو
آغاز میں محدود افراد کو جاپان میں داخلے کی اجازت ہوگی / فائل فوٹو

جاپان میں محدود پیمانے پر سیاحت کے شعبے کو کھولا جارہا ہے ۔

سیاحت جاپانی معیشت کے لیے اہم ہے مگر کورونا وائرس کی وبا کے دوران 2020 سے وہاں سخت ترین سرحدی پابندیوں کےنفاذکے بعد سے سیاحوں کو داخلے کی اجازت نہیں۔

اب ان پابندیوں کو کچھ نرم کرتے ہوئے طالبعلموں اور کچھ کاروباری افراد کو جاپان میں داخلے کی اجازت دی جارہی ہے۔

مگر انفرادی سیاحت کا شعبہ تاحال کچھ عرصے کے لیے بند رہے گا ۔

جاپان کے سیاحتی ادارے کے مطابق کچھ افراد کے گروپ کو مئی کے مہینے کے آخر تک جاپان میں داخلے کی اجازت آزمائشی بنیادوں پر دی جائے گی جس کو مدنظر رکھتے ہوئے مستقبل قریب میں سیاحت کا شعبہ مکمل طور پر کھولا جائے گا۔

ابتدائی طور پر امریکا، آسٹریلیا، تھائی لینڈ اور سنگاپور سے تعلق رکھنے والے سیاحوں کو جاپان میں داخلے کی اجازت ہوگی جو کورونا ویکسین کی 3 خوراکوں کا استعمال کرچکے ہوں گے۔

مگر ان سیاحوں کو خود گھومنے پھرنے کی اجازت نہیں ہوگی بلکہ سفری کمپنیوں سے رابطہ کرنا ہوگا اور کچھ افراد ہر وقت ان کے ساتھ ہوں گے۔

جاپانی ادارے نے بتایا کہ اس تجربے سے ہمیں سیاحتی اداروں کے لیے رہنما اصول مرتب کرنے میں مدد ملے گی جس سے وائرس کو پھیلنے سے روکا جاسکے گا۔

کورونا وائرس کی وبا سے قبل 2019 میں جاپان میں 3 کروڑ 19 لاکھ غیرملکی سیاح آئے تھے جن سے جاپانی معیشت کو 37 ارب ڈالرز کا فائدہ ہوا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM