دنیا
23 مئی ، 2022

افغانستان: خواتین اینکرز سے اظہارِ یکجہتی، مرد میزبانوں نے بھی ماسک سے چہرہ چھپالیا

خواتین اینکرز سے اظہار یکجہتی کیلئے مرد میزبانوں نے بھی اپنا چہرے ماسک لگا کر چھپا لیا ۔—فوٹو: اے پی
خواتین اینکرز سے اظہار یکجہتی کیلئے مرد میزبانوں نے بھی اپنا چہرے ماسک لگا کر چھپا لیا ۔—فوٹو: اے پی

افغانستان میں خواتین اینکرز سے اظہارِ یکجہتی کیلئے مرد میزبانوں نے بھی ماسک سے اپنا چہرہ چھپالیا۔

طالبان  حکومت نے گزشتہ دنوں افغانستان میں ٹی وی نشریات کا حصہ بننے والی تمام خواتین کو شوز کے دوران چہرے کو نقاب سے ڈھانپنے کا حکم دیا۔

 تاہم گزشتہ روز افغانستان کے بڑے ٹی وی چینلز پر خواتین پریزینٹرز نے طالبان کے حکم نامے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے اپنے چہروں کو ڈھانپے بغیر اسکرین پر پروگرام پیش کیے۔

بعد ازاں اس حوالے سے طالبان کا مؤقف بھی سامنے آیا جس میں افغانستان میں طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے ’ العربیہ ‘ سے گفتگو کے دوران خواتین اینکرز کے بغیر حجاب شوز کرنے پر گفتگو کی۔

ذبیح اللہ مجاہد نے زور دیتے ہوئے تمام چینلز پر واضح کیا کہ خواتین کے لیے عبایا اور حجاب افغانستان کی ثقافت کا حصہ ہیں اور پردہ اسلامی شریعت کے لیے لازمی ہے، اگرچہ حکومت وقت نے ٹی وی میزبانوں کو چہرہ ڈھانپنے کا حکم دیا ہے لیکن ٹی وی میزبانوں کے لیے چہرہ اور ناک ڈھانپنا ضروری ہے جوکہ ماسک لگاکر بھی ڈھانپا جاسکتا ہے۔

تاہم افغانستان کے بڑے نیوز چینل ٹولو نیوز نے طالبان کی جانب سے جاری حکم نامے پر عمل درآمد شروع کیا۔

افغانستان کے بڑے نیوز چینل ٹولو نیوز نے طالبان کی جانب سے جاری حکم نامے پر عمل درآمد شروع کیا۔«فوٹو: اے پی
افغانستان کے بڑے نیوز چینل ٹولو نیوز نے طالبان کی جانب سے جاری حکم نامے پر عمل درآمد شروع کیا۔«فوٹو: اے پی

ٹولو نیوز کی خاتون اینکر  نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ہم نے طالبان کے فیصلے پرمزاحمت کی اور چہرے کو ڈھانپنے کے خلاف تھے لیکن ہمارے چینل پر دباؤ ڈالا گیا اور کہا گیا کہ کوئی بھی خاتون پریزنٹر جو چہرے کو ڈھانپے بغیر اسکرین پر نظر آئے اسے کوئی اور کام دیا جائے یا اسے ہٹا دیا جائے اس لیے ہمیں مجبوراً چہرہ ڈھانپنا پڑا۔

اتوار کے روز افغانستان کے ایک بڑے نیوز چینلز میں مرد اینکرز نے چہرے پر ماسک لگا کر نشریات کا آغاز کیا۔فوڑو: اے پی
 اتوار کے روز افغانستان کے ایک بڑے نیوز چینلز میں مرد اینکرز نے چہرے پر ماسک لگا کر نشریات کا آغاز کیا۔فوڑو: اے پی

دوسری جانب  خواتین اینکرز سے اظہار یکجہتی کیلئے مرد میزبانوں نے بھی اپنا چہرے  ماسک لگا کر چھپا لیا ۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق اتوار کے روز افغانستان کے  بڑے نیوز چینلز میں مرد اینکرز نے چہرے پر ماسک لگا کر نشریات کا آغاز کیا۔


مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM