دنیا
20 جون ، 2022

بھارت: احتجاج اور توڑ پھوڑ میں ملوث نوجوانوں پر فوج کے دروازے بند

وزارت دفاع نے واضح کردیا کہ اگنی پتھ اسکیم کیلئے درخواست دینے والے ہر فرد کو یہ سرٹیفکیٹ دینا ہوگا کہ وہ احتجاج یا توڑ پھوڑ کا حصہ نہیں تھے— فوٹو: فائل
وزارت دفاع نے واضح کردیا کہ اگنی پتھ اسکیم کیلئے درخواست دینے والے ہر فرد کو یہ سرٹیفکیٹ دینا ہوگا کہ وہ احتجاج یا توڑ پھوڑ کا حصہ نہیں تھے— فوٹو: فائل

بھارتی فوج میں بھرتی کی نئی اسکیم کے خلاف احتجاج کا سلسلہ جاری ہے، پرتشدد واقعات کے پیش نظر 500 سے زائد ٹرینیں منسوخ کردی گئیں۔

 مختلف ریاستوں میں سکیورٹی ہائی الرٹ ہے جبکہ  دفعہ 144 بھی نافذ کردی گئی ہے۔

 اپوزیشن جماعتوں نے بھی عارضی بھرتی کی نئی اسکیم کی مخالفت کردی۔  بہار میں ہنگامہ آرائی کے بعد آج بھی 20 اضلاع میں انٹرنیٹ سروس معطل رہی۔

جھاڑکھنڈ میں تمام اسکول بند رہے، احتجاج اور توڑ پھوڑ میں ملوث نوجوانوں پر فوج کے دروازے بند کردیے گئے۔

 وزارت دفاع نے واضح کردیا کہ اگنی پتھ اسکیم کیلئے درخواست دینے والے ہر فرد کو یہ سرٹیفکیٹ دینا ہوگا کہ وہ احتجاج یا توڑ پھوڑ کا حصہ نہیں تھے۔

اگنی پتھ اسکیم کیا ہے؟

 بھارتی فوج میں بھرتی کے نئے نظام میں نوجوانوں کو صرف چار سال کیلئے فوج میں بھرتی کیا جائے گا، نئے نظام کے تحت نئے بھرتی ہونے والوں میں سے صرف ایک چوتھائی کو طویل مدت کیلئے فوج میں رکھا جائے گا۔

بھارت نے ’اگنی پتھ‘ پروگرام متعارف کرایا ہے جس کے تحت فوج میں بھرتی کے خواہش مند 17.5 سے 21 سال تک کے امیدواروں میں سے ٹیسٹ میں کامیاب ہونے والے نوجوانوں کو 4 سال کیلئے بھرتی کیا جائے گا جبکہ ان میں سے صرف 25 فیصد کو مستقل رکھا جائے گا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ بھارتی حکومت نے یہ قدم لوگوں کو زیادہ سے زیادہ روزگار فراہم کرنے اور پنشن اخراجات کو کم کرنے کیلئے اٹھایا ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM