پاکستان
11 اگست ، 2022

آئین توڑنے اور فوج میں نفاق ڈالنےکی کوشش پرکارروائی کرنا پڑے گی: شاہد خاقان

فوٹو: فائل
فوٹو: فائل

مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہےکہ حکومت مدت پوری کرے گی، اس کے بعد الیکشن میں جائیں گے، آئین توڑنے اور فوج میں نفاق ڈالنےکی کوشش پرکارروائی کرنا پڑےگی۔

جیو نیوز کے پروگرام’ آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ‘ میں گفتگو کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ ہمیں نہ عمران خان کا سرٹیفکیٹ چاہیے نہ کسی کی ضرورت ہے، حکومت مدت پوری کرے گی،اس کے بعد الیکشن میں جائیں گے،  تحریک انصاف نے پارلیمان میں بیٹھنے کے بجائے راہ فرار اختیار کی۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ ہمیں بغیر ثبوت کےگرفتار کیا گیا تھا،  آئین توڑنے اور فوج میں نفاق ڈالنےکی کوشش پرکارروائی کرنا پڑےگی۔

ان کا کہنا تھا کہ پولیس نے ڈرائیور کےگھر چھاپہ مار کر خاتون کو غلط گرفتار کیا، مجھے توقع ہے رانا ثنااللہ خاتون کی گرفتاری کا نوٹس لیں گے، اگر مزاحمت ہوئی بھی ہے تو خاتون کی ضمانت پر معاملہ ختم کرنا چاہیے۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ یہ تاثر غلط ہے کہ ہماری حکومت انتقامی کارروائی کر رہی ہے، قانون کو کاغذ سمجھیں گے تو قانون کو حرکت میں آنا پڑتا ہے، ہماری جیت کسی کی نااہلی پر منحصر نہیں ہے۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ میں کسی کی نااہلی کے حق میں نہیں ہوں، کیا الیکشن سے ملک کے معاملات بہتر ہوجائیں گے؟ آج ضرورت ملک میں استحکام کی ہے، 4سال کی غفلت اور کوتاہی 4 ماہ میں دور نہیں ہوتی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM