700 سال قدیم مارکیٹ جہاں سے من پسند دولہا خریدا جاسکتا ہے

فوٹو:فائل
فوٹو:فائل

لڑکیوں کا خواب ہوتا ہے کہ ان کا شریک حیات ان کی پسند کا اور اچھا ہوا، کچھ لڑکیوں کا یہ خواب پورا ہوجاتا ہے جبکہ اکثر  اس کوشش میں ناکام ہوجاتی ہیں۔

آج ہم آپ کو ایک ایسی جگہ کے بارے میں بتارہے ہیں جہاں خواتین اور ان کے گھر والے خود اپنی پسند کا دولہا خرید سکتے ہیں۔

بھارتی ریاست بہار میں تقریباً 700 سال قدیم ایک ایسی مارکیٹ ہے جہاں سے خواتین اور ان کا خاندان  اپنی بیٹی کیلئے من پسند دولہا خرید سکتا ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارتی ریاست بہار کے ضلع مدھوبانی میں پیپل کے درختوں کے نیچے ہزاروں شادی کے خواہش مند افراد کھڑے ہوتے ہیں جہاں انہیں لڑکی یا اس کے گھر والے آکر اپنے بجٹ کے مطابق  پسند کرتے ہیں۔

اس کے علاوہ لڑکی اور اس کا خاندان پسند آنے والے لڑکے کی ڈگری ، اس کا برتھ سرٹیفکیٹ اور دیگر دستاویزات  کی تصدیق کرتے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق 9 دن تک جاری رہنے والی یہ  مارکیٹ تقریباً 700 سال قبل کرناٹ خاندان کے دور حکومت میں راجہ ہاری سنگھ نے شروع کی تھی تاکہ خواتین کے لیے اپنے من پسند دولہے کے انتخاب میں آسانی ہوسکے۔

رپورٹس کے مطابق دولہےکی قیمت اس کی قابلیت اور خاندانی پسِ منظر کے مطابق ادا کی جاتی ہے۔  

اس مارکیٹ میں اکثر  لڑکیوں کے خاندان کو  ڈاکٹرز ، انجینیئرز اور دیگر شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد کی تلاش رہتی ہے تاکہ وہ زیادہ جہیز نہ لیں۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM