Can't connect right now! retry

پاکستان
15 جولائی ، 2018

پیپلز پارٹی اور چند دیگر جماعتوں کو الیکشن سے روکا جارہا ہے، بلاول بھٹو

اداروں کے درمیان ٹکراؤ نہیں ہونا چاہیے، متنازع الیکشن سے متنازع پارلیمنٹ وجود میں آئے گی، چیئرمین پیپلز پارٹی — فوٹو: اسکرین گریب 

مالاکنڈ: چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ انتخابات کے لیے سازگار ماحول نہیں مل رہا، ہماری جماعت سماعت چند دیگر جماعتوں کو الیکشن سے روکا جارہا ہے۔

مالاکنڈ میں پریس کانفرنس کے دوران بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے امیدوار اور کارکن مشکلات کے باوجود کام کر رہے ہیں، ہمارے خلاف جب ہتھکنڈے استعمال ہوتے ہیں تو اتنے ہی زیادہ ہمارے کارکن جوش میں آتے ہیں۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ انتخابات میں حصہ لینے کے لیے یکساں مواقع نہیں دیے جارہے، پیپلز پارٹی کو دیوار سے لگایا جانا ناقابل قبول ہے، ہمیں تنگ کیا جاتا ہے اور ہم اس مسئلے کو الیکشن کمیشن کے سامنے اٹھائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ بروقت اور شفاف انتخابات ہمارا حق ہے، ہمیں جتنا تنگ کیا جاتا ہے ہمارے ووٹرز کا جذبہ اتنا ہی بڑھ جاتا ہے، اگر کمزور پارلیمنٹ بنتی ہے تو عوام کے مسائل کے حل میں مشکلات ہوں گی۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ اداروں کے درمیان ٹکراؤ نہیں ہونا چاہیے، ادارے اپنے آئینی دائرے میں رہیں تاکہ عوامی مسائل حل ہوں اور عوام کے مسائل پارلیمنٹ میں حل ہونے چاہییں۔

انہوں نے کہا کہ متنازع الیکشن سے متنازع پارلیمنٹ وجود میں آئے گی، کٹھ پتلی اور کمزور حکومت عوام کے مسائل حل نہیں کرسکتی، اقتدار میں آکر نیشنل ایکشن پلان کو وسیع کریں گے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی کا مزید کہنا تھا کہ سیاسی کارکنوں کی گرفتاریاں سمجھ سے بالاتر ہیں، عوام کے حقیقی نمائندے ہی مسائل حل کرسکتے ہیں۔

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کو نشانہ بناتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ آپ وزیراعظم بنتے ہیں تو صرف اپنی جماعت کے نہیں سب کے وزیراعظم ہوتے ہیں، سیاسی کارکنوں کو زندہ لاشیں اور گدھا کہنا عوام کو نشانہ بنانے کے مترادف ہے۔

مسلم لیگ (ن) اور تحریک انصاف کے حوالے سے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ان دونوں جماعت کے ساتھ نظریاتی ایشوز ہیں۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM