Can't connect right now! retry

بچے کی دماغی صحت کیلئے انار کا جوس حیرت انگیز ٹانک

ماں کے پیٹ میں موجود بچے کی دماغی صحت کے لیے انار کا جوس غیرمعمولی اہمیت کا حامل ہے: ماہرین۔ فوٹو: فائل 

امریکہ میں ماہرین صحت نے ایک نئی تحقیق میں بتایا ہے کہ ماں کے پیٹ میں موجود بچے کی دماغی صحت کے لیے انار کا جوس غیرمعمولی اہمیت کا حامل ہے۔ ماہرین نے حاملہ خواتین کو مشورہ دیا ہے کہ وہ حمل کے تیسرے اور آخری تین ماہ کے دوران روزانہ انار کا ایک گلاس ضرور پئیں۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق امریکہ کی ہارورڈ یونیورسٹی کے زیرانتظام بریگھم ویمن ہسپتال کے ماہرین کی طرف سے کی گئی تحقیق کے مطابق جب نومولود بچوں کے دماغ کی صحت کی بات کی جاتی ہے تو اس کے لیے کچھ اقدامات ماں کو بچے کی پیدائش سے پہلے کرنا ہوتے ہیں، بالخصوص حمل کے اس دور میں جب بچے کی ماں کے پیٹ میں تیزی کے ساتھ نشو نما ہو رہی ہو۔

رحم مادر میں بعض اوقات بچوں کو نشوونما میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ بچوں کا جسم ان کی عمر کی نسبت چھوٹا رہ جاتا ہے۔ بہت سے بچوں کو چلنے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اس کی وجہ بچے کو ماں کے پیٹ میں آکسیجن اور غذائی مواد کی کمی کا سامنا رہا ہوتا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ہر دس میں سے ایک بچے کو آکسیجن کی کمی یا دماغی کمزوری کا سامنا ہوتا ہے اگر ماں کے پیٹ میں بچے کو آکسیجن کی کمی رہی ہو تواس کی بینائی پربھی منفی اثرات مرتب ہوسکتے ہیں۔

تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ حمل کے ابتدائی 78 ہفتوں کے دوران اپنا طبی معائنہ کرانے والی 78 خواتین کو بتایا گیا کہ ان کے پیٹ میں بچے کی نشو نما سست روی سے ہو رہی ہے۔ ماہر ین نے مائیں بننے والی عورتوں کو کیپسول کھانے کے بجائے انار کا جوس پینے کا مشورہ دیا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM