Can't connect right now! retry

پاکستان
09 جولائی ، 2020

بلاگر علی سلمان کی اہلیہ صدف زہرہ کی موت کا معمہ حل نہ ہوسکا

سوشل میڈیا بلاگر علی سلمان کی اہلیہ کے قتل کے معاملے میں ان کی اہلیہ صدف زہرہ کی ہمشیرہ ڈاکٹر مہوش زہرہ نے کہا ہے کہ علی سلمان اور صدف زہرہ کے درمیان گزشتہ ایک سال کے دوران اکثر لڑائی جھگڑا رہتا تھا، علی سلمان مارنے پیٹنے اورگالم گلوچ کاعادی ہے۔

گزشتہ روز سوشل میڈیا بلاگر علی سلمان کی اہلیہ صدف زہرہ راولپنڈی میں اپنے گھر میں پنکھے کے ساتھ لٹکی ہوئی پائی گئیں۔

صدف زہرہ نجی ادارے میں ٹیچر تھیں۔ ان کی بہن کہتی ہیں کہ ان کابہنوئی علی سلمان مختلف لڑکیوں کے ساتھ انٹرنیٹ اور موبائل پرمشغول رہتا جس پر گزشتہ ایک سال کےدوران میاں بیوی کے درمیان لڑائیاں جاری ہیں، بعدمیں ان میں شدت آ گئی اور نوبت مارپیٹ تک پہنچ گئی۔

ڈاکٹر مہوش زہرہ نے الزام عائد کیا ہے کہ ان کے بہنوئی نے ان کی بہن کاقتل کرکے اسے خودکشی ظاہر کرنے کی کوشش کی۔

پولیس حکام کے مطابق علی سلمان سے متعلق اہل علاقہ کا کہنا ہے کہ وہ اپنی بیوی پرتشدد کرتا تھا، گالم گلوچ کابھی عادی ہے، اہل محلہ کےساتھ بھی نارواسلوک رکھتا ہے۔

دو ماہ قبل اہل علاقہ نے پولیس کو گھر سے لڑائی جھگڑے کی آوازیں آنے پربلایا تھا تاہم صدف زہرہ نے اسے گھریلو مسئلہ قرار دیتے ہوئے پولیس کو واپس بھجوا دیا تھا۔

لاش سے حاصل نمونے اور کمرے سے حاصل شواہد کو لاہور میں فارنزک لیبارٹری بھجوائے گئےہیں ، پولیس حکام کاکہناہےکہ رپورٹ آنے پرمقدمے کی کارروائی آگے بڑھے گی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM