Can't connect right now! retry

مسجد وزیر خان میں شوٹنگ، صبا قمر اور بلال سعید کیخلاف کارروائی کا مطالبہ

فوٹو: بشکریہ انسٹاگرام 

پاکستانی گلوکار  بلال سعید اور اداکارہ صبا قمر نے جیسے ہی اپنے آنے والے گانے 'قبول ہے'کی شوٹنگ کے دوران چند تصاویر اور ویڈیو شیئر کیں جو کہ مسجد وزیر خان کے اندر  شوٹ کیا گیا ہے، تو ان پر شدید تنقید کی جانے لگی۔

بلال سعید کے اس گانے کی ہدایت کاری اداکارہ صبا قمر نے ہی دی ہے جب کہ شوٹنگ کے دوران شیئر کی جانے والی تصاویر اور ویڈیو کے بعد سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے گلوکار  بلال سعید اور اداکا رہ صبا قمر کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔

گانے کی شوٹنگ کے دوران کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا صارفین کا کہنا تھا کہ ان دونوں نے مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کرنے کے ساتھ ساتھ مقدس مقام کی بے عزتی کی ہے لہٰذا دونوں کے خلاف ایکشن لینا چاہیے۔

View this post on Instagram

"قبول" کا ٹیزر پیش خدمت ہے. یہ وہ واحد حصہ ہے جو تاریخی وزیر خان مسجد میں فلمایا گیا تھا۔ یہ میوزک ویڈیو کا تعارفی حصہ ہے جس میں نکاح کا منظر پیش کیا گیا ہے۔ اسے نہ تو کسی طرح کے پلے بیک میوزک کے ساتھ فلمایا گیا تھا اور نہ ہی یہ میوزک ٹریک کا حصہ ہے ، فلم بندی کے وقت مسجد کی انتظامیہ بھی موجود تھی اور وہ گواہ ہیں کہ وہاں کسی قسم کی کوئی موسیقی نہیں چلائی گئی۔ مزید پوری ویڈیو 11 اگست کو سامنے آرہی ہے۔ آپ لوگ کسی نتیجے پر پہنچنے سے پہلے براہ کرم ویڈیو دیکھیں۔ اور سمجھیں کہ ہم سب ایک ہی صفحے پر ہیں۔ہم سب مسلمان ہیں-ہمارے دل میں بھی اپنے مذہب اسلام کےلیےاتنی ہی محبت اور احترام ہے جتنا آپ سب کے دل میں ہےاور کبھی بھی اس کی توہین کرنے کا سوچ بھی نہیں سکتے ہیں۔ بی ٹی ایس کی ویڈیو جو سوشل میڈیا پر وائرل کی گئ ہے وہ ’قبول‘ کے پوسٹر کے لیے محض ایک کلک تھا جس میں شادی شدہ جوڑے کو ان کے نکاح کے بعدخوشی سے دکھایا گیا تھا۔ اس کے باوجود اگر ہم نے انجانےمیں اگر کسی کے جذبات کو ٹھیس پہنچائ ہے تو ہم تہء دل سے آپ سب سے معذرت خواہ ہیں۔ محبت اور امن! # اگست 11 کوقبول مکمل ویڈیو ریلیز ہو رہی ہے. Presenting the "Qubool" teaser This is also the only sequence that was shot at the historical Wazir Khan Mosque. It’s a prologue to the music video featuring a Nikah scene. It was neither shot with any sort of playback music nor has it been edited to the music track, the adminstration of the Mosque was also present at the time of shoot and they are witness that no music was played there. Further the full video comes out on 11th of August. Please watch the video before you guys jump to conclusions. And understand that we all are on the same page. We love and respect our religion as much as all of you and would never even think of doing anything to disrespect it. The BTS video that's been circulated on social media was just a circular movement to click stills for the poster of ‘Qabool’ depicting a happily married couple right after their Nikah. Despite this if we have unknowingly hurt anyone’s sentiments we apologise to you all with all our heart. Love & Peace! #Qubool releasing on 11th of August! #bilalsaeed #sabaqamar #masjid

A post shared by Bilal Saeed (@bilalsaeed_music) on

مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پاکستان کے ٹرینڈنگ پپنل پر بھی اداکار صبا قمر کا نام سر فہرست ہے۔

بعدازاں صبا قمر اور بلال سعید دونوں کی جانب سے اس معاملے پر وضاحتی بیان کے ساتھ ساتھ معافی بھی مانگی گئی ہے۔

دونوں فنکاروں نے اپنے گانے 'قبول ہے' کے ٹیزر کے ساتھ کیپشن لکھا جس میں انہوں نے لکھا کہ 'یہ وہ واحد حصہ ہے جو تاریخی وزیر خان مسجد میں فلمایا گیا تھا، یہ میوزک ویڈیو کا تعارفی حصہ ہے جس میں نکاح کا منظر پیش کیا گیا ہے، اسے نہ تو کسی طرح کے پلے بیک میوزک کے ساتھ فلمایا گیا تھا اور نہ ہی یہ میوزک ٹریک کا حصہ ہے'۔

ان کا کہنا تھا کہ 'فلم بندی کے وقت مسجد کی انتظامیہ بھی موجود تھی اور  وہ گواہ ہیں کہ وہاں کسی قسم کی کوئی موسیقی نہیں چلائی گئی، مزید پوری ویڈیو 11 اگست کو سامنے آ رہی ہے، آپ لوگ کسی نتیجے پر  پہنچنے سے پہلے براہ کرم ویڈیو دیکھیں اور سمجھیں کہ ہم سب ایک ہی صفحے پر  ہیں، ہم سب مسلمان ہیں، ہمارے دل میں بھی اپنے مذہب اسلام کے لیے اتنی ہی محبت اور احترام ہے جتنا آپ سب کے دل میں ہے اور کبھی بھی اس کی توہین کرنے کا سوچ بھی نہیں سکتے ہیں'۔

فنکاروں نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ 'قبول ہے کی بی ٹی ایس کی ویڈیو جو سوشل میڈیا پر وائرل کی گئی تھی وہ پوسٹر کے لیے محض ایک کلک تھا جس میں شادی شدہ جوڑے کو ان کے نکاح کے بعد خوشی سے دکھایا گیا تھا'۔

دونوں فنکاروں نے کہا کہ 'اس کے باوجود اگر ہم نے انجانے میں اگر کسی کے جذبات کو ٹھیس پہنچائی ہے تو ہم تہہ دل سے آپ سب سے معذرت خواہ ہیں'۔ 

بعد ازاں ترجمان پنجاب حکومت مشوانی اظہر نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ اس معاملے کی تحقیقات کا حکم دے دیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ معاملے میں ملوث افراد اور این او سی کی شرائط کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM