Can't connect right now! retry

دنیا
09 جنوری ، 2021

بھارت کا لداخ میں چینی فوجی کو حراست میں لینےکا دعویٰ

بھارتی فوج کے مطابق چین کی پیپلز لبریشن آرمی کے ایک اہلکار کو گذشتہ روز بھارتی علاقے سے حراست میں لیا گیا ہے،فوٹو: فائل

بھارتی فوج نے لائن آف ایکچوئل کنٹرول (ایل اے سی) پار کرنے والے چینی فوجی کوحراست میں لینے کا دعویٰ کیا ہے۔

غیر ملکی خبرایجنسی کے مطابق گذشتہ سال جون میں لداخ کی وادی گلوان میں بھارتی فوج کے کرنل سمیت 20 فوجی مارے جانے کے بعد سے بھارت کی جانب سے کسی چینی فوجی کو حراست میں لیے جانےکا یہ دوسرا واقعہ ہے۔

خیال رہےکہ مذکورہ واقعے کے بعد سے مشرقی لداخ کی سرحد پر بھارت چین تناؤ برقرار ہے اور دونوں ممالک اس مقام پر ہزاروں فوجی تعینات کرچکے ہیں جہاں آج کل شدید سردی اور برف موجود ہے۔

بھارتی فوج کے مطابق چین کی  پیپلز لبریشن آرمی کے ایک اہلکار کو گذشتہ روز بھارتی علاقے سے حراست میں لیا گیا ہے۔

دوسری جانب چینی فوج کے ترجمان اخبار نے اپنے ایک اہلکار کی گمشدگی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت کو اس حوالے سے آگاہ کردیا ہے۔

اخبار نے بھارت پر زور دیا ہے کہ وہ دونوں ممالک کے درمیان  معاہدے پر عمل کرتے ہوئے گمشدہ فوجی کو چین کے حوالے کرے تاکہ بارڈر پر موجود تناؤ میں کمی آئے۔

خیال رہے کہ اس سے قبل گذشتہ اکتوبر میں مشرقی لداخ کے ڈیم چوک سیکٹر میں بھی ایک چینی فوجی غلطی سے سرحد پار کرکے بھارتی علاقے میں چلا گیا تھا جسے بھارتی فوج نے حراست میں لے کر اگلے روز چین کے حوالے کردیا تھا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM