Can't connect right now! retry

انٹرٹینمنٹ
11 اکتوبر ، 2021

امیتابھ بچن کے پاس کتنی دولت ہے؟

امیتابھ کی حالیہ دولت 455 ملین ڈالرہے —فوٹوفائل
امیتابھ کی حالیہ دولت 455 ملین ڈالرہے —فوٹوفائل

امیتابھ بچن آج اپنی 79 ویں سالگرہ منا رہے ہیں اور یہ کہنا غلط نہیں ہوگا کہ جس عمر میں لوگ اپنی پینشن پر گزارہ کر رہے ہوتے ہیں، امیتابھ فلموں ، برانڈ کی تائید اور ٹی وی شوز کے ذریعے کمائی کے نئے ریکارڈ قائم کر رہے ہیں۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق، امیتابھ کی حالیہ دولت 455 ملین ڈالرہے جو کہ 3322 کروڑ بھارتی روپے بنتے ہیں جبکہ اداکار کی دولت میں ہر سال 12 فیصد اضافہ ہوتا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق امیتابھ کی ماہانہ آمدنی 5 ملین امریکی ڈالر ( 35 کروڑ ) بھارتی روپے جبکہ سالانہ آمدنی 50 ملین ڈالر 350 کروڑ بھارتی روپےہے۔

امیتابھ نے کلکتہ  میں 500 بھارتی روپے سے کمائی شروع کی تھی—فوٹوفائل
امیتابھ نے کلکتہ  میں 500 بھارتی روپے سے کمائی شروع کی تھی—فوٹوفائل

امیتابھ بچن کی پہلی کمائی کتنی تھی؟

امیتابھ نے کلکتہ میں 500 بھارتی روپے سے کمائی شروع کی تھی اور 1999 میں دیوالیہ پن کے دہانے پر پہنچے تھے ، ایک بار پھر اس طرح سامنے آئے کہ آج 3000 کروڑ کی مالیت کے ساتھ ، وہ8 ویں  امیر ترین بھارتی اداکار سمجھے جاتے ہیں۔

9 میں پہلی فلم سات ہندوستانی کے لیے 5000 روپے بھارتی روپے ملے۔—فوٹوفائل
9 میں پہلی فلم 'سات ہندوستانی' کے لیے 5000 روپے بھارتی روپے ملے۔—فوٹوفائل

بگ بی نے فلم ’شعلے‘ کی فیس کتنی لی؟ 

امیتابھ کو 1969 میں پہلی فلم 'سات ہندوستانی' کے لیے 5000 روپے بھارتی روپے ملے۔ اس کے بعد ان کی مسلسل 8 فلمیں فلاپ ہوئیں۔ 4 سال کے بعد ، 1973 میں 'زنجیر' سے قسمت چمکی اور پھر ایک بعد ایک کے بعد ایک سپر ہٹ فلمیں آئیں اور وہ اس وقت کے سب سے زیادہ معاوضہ لینے والے اداکار بن گئے۔

امیتابھ کو فلم 'شعلے' میں جئے کے کردار کے لیے ایک لاکھ روپے ملے، اس کے پانچ سال بعد ، جب تک فلم 'شان' آئی ، اس کی فیس 9 لاکھ روپے تک بڑھ چکی تھی۔

خدا گواہ 1996 میں آئی جس کے بعد اس کی فیس 3 کروڑ ہو گئی۔
خدا گواہ 1996 میں آئی جس کے بعد اس کی فیس 3 کروڑ ہو گئی۔

فلم ’خدا گواہ‘ کے لیے امیتابھ نے 3 کروڑ لیے

امیتابھ کی مشہور فلم خدا گواہ 1996 میں آئی جس کے بعد اس کی فیس 3 کروڑ ہو گئی۔

آج ایک فلم کی فیس 15 سے 20 کروڑ

آج امیتابھ ایک فلم کے  15 سے 20 کروڑ وصول کرتے ہیں  لیکن یہ اس  بات پر منحصر ہے کہ کردار کتنا طویل ہے اور کتنے دن کا شیڈول ہوگا۔

ایسا نہیں ہے کہ ایک بار جب امیتابھ نے فلموں میں کمائی شروع کی تو پھر ان کی کمائی کا گراف اسی طرح زندگی بھر بڑھتا رہا، 1999 میں ، وہ دیوالیہ ہونے کے دہانے پر تھے۔

ان کی اے بی سی ایل کمپنی نے 1996 میں بنگلور میں 'مس ورلڈ' ایونٹ کا انتظام سنبھالا، اس ایونٹ میں انہیں 7 کروڑ روپے کا نقصان ہوا، اسی دوران  اس کمپنی نے فلم 'موتیوتا' بنائی جو کہ بری طرح فلاپ ہوئی۔

’کون بنےگا کروڑ پتی‘ ایک قسط کے ساڑھے 3 کروڑ روپے

امیتابھ کو اس شو کی میزبانی کے لیے فی قسط 3.5 کروڑ ملے—فوٹوفائل
 امیتابھ کو اس شو کی میزبانی کے لیے فی قسط 3.5 کروڑ ملے—فوٹوفائل

خیال کیا جاتا ہے کہ معروف بھارتی شو کون بنےگا کروڑ پتی (کے بی سی) سے  امیتابھ نے ایک سیزن میں 70 کروڑ کمائے۔

 امیتابھ کو اس شو کی میزبانی کے لیے فی قسط 3.5 کروڑ ملے یعنی اگر ایک سیزن کی 20 اقساط سے ان کی مجموعی آمدنی 70 کروڑ  بھارتی روپے رہی۔

جیا بچن کے مطابق امیتابھ کی دولت کتنی؟

امیتابھ کی اہلیہ جیا بچن نے 2018 میں راجیہ سبھا کے امیدوار کی حیثیت سے اپنے اور امیتابھ کے اثاثوں کی تفصیلات  ظاہر کیں، جن کے مطابق 2016-17 میں امیتابھ کی سالانہ آمدنی 78 کروڑ روپے تھی۔

اس دوران امیتابھ کے بینک میں 50 کروڑ روپے جمع تھے جب کہ انہوں نے اسٹاک مارکیٹ میں 97 کروڑ کی سرمایہ کاری کر رکھی تھی، ان کے پاس 28 کروڑ مالیت کے زیورات، 2کروڑ کا سونا اور 5 کروڑ مالیت کے چاندی کے زیورات بھی تھے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM