انٹرٹینمنٹ
20 اکتوبر ، 2021

اجے دیوگن کو بیٹے نے تھپڑ کیوں مارا؟ اداکار نے خود بتادیا

اجے دیوگن اور کاجول کی شادی کو 22 سال ہوچکے ہیں اور ان کے 2 بچے بھی ہیں— فوٹو:فائل
اجے دیوگن اور کاجول کی شادی کو 22 سال ہوچکے ہیں اور ان کے 2 بچے بھی ہیں— فوٹو:فائل

بالی وڈ اداکار  اجے دیوگن نے اعتراف کیا ہے کہ کم عمر بیٹے یوگ دیوگن نے میری فلم دیکھتے ہوئے تھپڑ مارا۔

اجے دیوگن اور  اداکارہ کاجول کی شادی کو 22 سال ہوچکے ہیں اور ان کے 2 بچے ہیں۔ اجے دیوگن رومانوی، کامیڈی اور ایکشن فلموں میں اداکاری کے جوہر دکھا چکے ہیں اور وہ اپنی جاندار اداکاری کے باعث پہچانے جاتے ہیں۔

لیکن اب خود اداکار نے اعتراف کیا ہے کہ بیٹے یوگ نے انہیں فلم دیکھنے کے دوران تھپڑ رسید کیا تھا۔

اپنے ایک انٹرویو  میں اجے دیوگن کا کہنا تھاکہ فلم ‘گول مال اگین’ کو گھر والے دیکھ کر بہت ہنسے تھے جبکہ کاجول کی ہنسی بند ہی نہیں ہورہی تھی۔

ان کا کہنا تھاکہ فلم کے دوسرے ہاف میں بیٹا یوگ رونے لگا تھا اور وہ دوبار رویا تھا لیکن فلم میں پری (پرینیتی چوپڑا) کے کردار کی موت پر اس نے مجھے تھپڑ بھی مار دیا تھا اور آنسوؤں سے رونے لگا تھا۔

اجے کا کہنا تھاکہ یوگ میری گود میں موجود تھا اور میں نے اس پوچھا کیا ہوا؟ لیکن اس نے مجھے تھپڑ مارتے ہوئے کہا کہ مجھے روتے ہوئے مت دیکھو۔

خیال رہے کہ کامیڈی فلم ’گول مال اگین‘ 2017 میں ریلیز ہوئی تھی جس میں اجے دیوگن اور پرینیتی چوپڑا کے علاوہ ارشد وارثی اور تشار کپور سمیت دیگر نے اہم کردار ادا کیا۔

اس فلم کی ریلیز کے وقت یوگ کی عمر 7 سال تھی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM