انٹرٹینمنٹ
21 ستمبر ، 2022

اجے اور سدھارتھ کی نئی فلم مشکل کا شکار، بی جے پی رکن اسمبلی کا پابندی کا مطالبہ

مدھیہ پردیش کے وزیر تعلیم کی جانب سے وزیر اطلاعات و نشریات کو فلم پر پابندی عائد کرنے کی درخواست کی ہے/ فائل فوٹو
مدھیہ پردیش کے وزیر تعلیم کی جانب سے وزیر اطلاعات و نشریات کو فلم پر پابندی عائد کرنے کی درخواست کی ہے/ فائل فوٹو

بھارتی اداکار اجے دیوگن اور  سدھارتھ ملہوترا کی نئی آنے والی کامیڈی فلم 'تھینک گوڈ' ریلیز سے پہلے ہی مشکلات کا شکار  ہو گئی ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست مدھیہ پردیش سے تعلق رکھنے والے بھارتیہ جنتہ پارٹی کے  وزیر تعلیم وشواس سارنگ کی جانب سے وزیر اطلاعات و نشریات کو فلم پر پابندی عائد کرنے کی درخواست کی گئی ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق ریاستی وزیر تعلیم نے وزیر اطلاعات و نشرایات کو خط لکھتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ اداکاروں کی آنے والی کامیڈی فلم 'تھینک گوڈ' میں ہندو دیوتاؤں کے حوالے سے  نامناسب منظر کشی کی گئی ہے، تاہم وزیر اطلاعات و نشریات کی جانب سے تاحال کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔

فلم 'تھینک گوڈ' کامیڈی پر مشتمل ایک تفریحی فلم ہے جس میں اجے دیوگن، سدھارتھ ملہوترا اور  راکل پریت سنگھ مرکزی کردار ادا کر رہے ہیں۔

فلم کی کہانی ایک عام آدمی کے گرد گھومتی ہے جو ایک حادثے میں مر جاتا ہے جس کا کردار سدھارتھ ملہوترا کرتا ہے اور پھر وہ موت اور  زندگی کے درمیان ایک الگ دنیا میں چلا جاتاہے جہاں وہ اجے دیوگن سے ملتا ہے اور اجے دیوگن سدھارتھ کے ساتھ گیم آف لائف کھیلتا ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM