کاروبار
24 ستمبر ، 2022

ایف بی آر کی بلٹ پروف گاڑیوں کی ڈیوٹی فری درآمد کا ایس آر او جاری کرنے کی تردید

وفاقی کابینہ نے 2019 میں اس طرح کی سہولت دینے کی منظوری دی تھی لیکن اس سلسلے میں ابھی تک کوئی نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا گیا: فیڈرل بورڈ آف ریونیو— فوٹو: فائل
وفاقی کابینہ نے 2019 میں اس طرح کی سہولت دینے کی منظوری دی تھی لیکن اس سلسلے میں ابھی تک کوئی نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا گیا: فیڈرل بورڈ آف ریونیو— فوٹو: فائل

فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے بلٹ پروف گاڑیوں کی ٹیکس فری اور ڈیوٹی فری درآمد کا ایس آر او جاری کرنے کی تردید کر دی۔

ایف بی آر کے بیان کے مطابق  میڈیا کے مختلف حصوں میں اس حوالے سے شائع ہونے والی خبروں میں کوئی صداقت نہیں ہے اور یہ درست حقائق پر مبنی نہیں ہے۔

ایف بی آر کا کہنا ہے کہ وفاقی کابینہ نے 2019 میں اس طرح کی سہولت دینے کی منظوری دی تھی لیکن اس سلسلے میں ابھی تک کوئی نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا گیا۔

گزشتہ دو روز سے ملکی میڈیا پر خبردی گئی تھی کہ سابق فوجی اعلیٰ افسران کیلئے 6000 سی سی تک بلٹ پروف گاڑیوں کی درآمد کو ڈیوٹی فری قرار دیا گیا ہے۔

یہ دعویٰ کیا گیا تھا کہ اس بارے میں نوٹیفکیشن پر دستخط کر دیے گئے ہیں اور جلد ایس ار او جاری کر دیا جائے گا۔

اس کے بعد اس پر سوشل میڈیا پر سخت تنقید کی گئی تھی تاہم اب ایف بی آر نے نوٹیفکیشن جاری کرنے اور اس طرح کی کسی بھی پیشرفت کی تردید کر دی ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM