کھیل
09 دسمبر ، 2022

دوران انٹرویو ثانیہ سے علیحدگی کے سوال پر شعیب ملک نے میزبان کو کیا جواب دیا؟

کرکٹ مصروفیات کی وجہ سے فیملی کے لیے وقت نہیں ملتا تھا اور اب بیٹے اذہان نے بھی اسکول جانا شروع کردیا ہے: شعیب ملک کی نجی میڈیا سے گفتگو/فوٹوفائل
کرکٹ مصروفیات کی وجہ سے فیملی کے لیے وقت نہیں ملتا تھا اور اب بیٹے اذہان نے بھی اسکول جانا شروع کردیا ہے: شعیب ملک کی نجی میڈیا سے گفتگو/فوٹوفائل

پاکستان کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر شعیب ملک نے  اہلیہ ثانیہ سے علیحدگی سے متعلق افواہوں کے سوال پر میزبان کو گریز  کرنے کا مشورہ دے دیا۔

نجی میڈیا سے گفتگو کے دوران شعیب ملک نے اپنے کرکٹ کیرئیر سمیت مختلف موضوعات پر گفتگو کی جس دوران  میزبان نے ان کی ثانیہ مرزا سے علیحدگی سے متعلق افواہوں کا بھی سوال کیا۔

جس کے جواب میں شعیب ملک کا کہنا تھا کہ  یہ ہمارا ذاتی معاملہ ہے اس کے لیے میں اور میری اہلیہ دونوں میں سے کوئی بھی اس سوال کا جواب نہیں دے رہے لہذا اس سوال سے گریز کریں۔

 کرکٹ مصروفیات کی وجہ سے فیملی کے لیے وقت نہیں ملتا تھا: شعیب ملک

ایک سوال پر شعیب ملک نے بتایا کہ کرکٹ مصروفیات کی وجہ سے فیملی کے لیے  وقت نہیں ملتا تھا اور اب بیٹے اذہان  نے بھی اسکول جانا شروع کر دیا ہے جس کے بعد میں نے فیملی سے بات کی اور فیصلہ کیا کہ کرکٹ کم کھیلی جائے، پہلے میں ہر لیگ کھیلتا تھا جو اب میں نے کم کر دی ہے لیکن  اب بھی کرکٹ  پریکٹس اور  فٹنس پر توجہ  بھرپور ہے۔

کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے سوال پر  شعیب ملک کا کہنا تھا کہ کرکٹ سے ریٹائر ہونے کا بالکل بھی ارادہ نہیں جب بھی ایسا سوچوں گا سب کو پتہ چل جائے گا، ابھی سارا فوکس کرکٹ پر ہے لیکن لیگ کرکٹ کو کم کردیا ہے، جب بھی  ریٹائرمنٹ کا  ارادہ کیا تو لیگ کرکٹ سمیت تمام فارمیٹ سے ریٹائر ہو جاؤں گا۔

بابر کو جب بھی میری ضرورت پڑی ہمیشہ سے ہوں اور ہمیشہ اس کے پاس رہوں گا: شعیب ملک

 کپتان بابر سے دوستی اور بات چیت سے متعلق کیے سوال پر  قومی کھلاڑی کا کہنا تھا کہ  بابر  اعظم کو چھوٹا بھائی سمجھتا ہوں، بابر نے مجھے ایشیا کپ کے دوران ہی کہہ دیا تھا کہ ورلڈکپ میں یہی ٹیم جائے گی، بابر کو جب بھی میری ضرورت پڑی ہمیشہ سے ہوں اور ہمیشہ اس کے پاس رہوں گا۔

انھوں نے کہا کہ اگر میں کسی وجہ سے ٹیم میں نہیں ہوا تو ایسا ہر گز نہیں ہے کہ میں بابر سے  منہ بنا لوں یا ناراض  ہو جاؤں، میری دعائیں ہمیشہ بابر کے ساتھ ہیں اور میں ہمیشہ سے چاہتا ہوں بابر ترقی کرے اور ہمیشہ وہ سرفہرست رہے، مجھے بابر سے کوئی گلہ نہیں تاہم  ورلڈکپ کے بعد سے بابر سے کوئی گفتگو نہیں۔

ایک چیز شروع سے میں یہ واضح کرچکا ہوں میرا کپتانی میں کوئی انٹرسٹ نہیں ہے: شعیب ملک 

ایک سوال کے جواب میں  شعیب ملک کا کہنا تھا کہ جو لوگ یہ سوچتے ہیں میری سلیکشن سے متعلق  ٹوئٹ کی وجہ سے قومی ٹیم میں سلیکشن نہیں ہو سکی  وہ غلط سوچتے ہیں، میں نے وہ ٹوئٹ اس لیے کی جو میں نے دیکھا اس میں بہتری آسکی، میں ہرگز  دل برداشتہ نہیں ہوں۔

 کراچی کنگز کی کپتانی سے متعلق کیے گئے سوال پر  شعیب ملک کا کہنا تھا کہ ضرورت پڑنے پر میں نے کپتانی ضروری کی ہے لیکن ایک چیز شروع سے واضح کرچکا ہوں کہ میری کپتانی میں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ 

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM