پاکستان
Time 31 جولائی ، 2023

سپریم کورٹ: سویلینز کے ملٹری ٹرائل کیخلاف کیس میں پھر فل کورٹ بنانے کی درخواست دائر

سویلینزکے فوجی عدالتوں میں ٹرائل کے کیس کی سماعت کل ہوگی— فوٹو:فائل
سویلینزکے فوجی عدالتوں میں ٹرائل کے کیس کی سماعت کل ہوگی— فوٹو:فائل

سپریم کورٹ میں سویلینز کے فوجی عدالتوں میں ٹرائل کے خلاف کیس میں ایک بار پھر فل کورٹ بنانے کی درخواست دائر کر دی گئی۔

سپریم کورٹ میں سویلنز کے فوجی عدالتوں میں ٹرائل کے خلاف کیس میں درخواست گزار کرامت علی کے وکیل فیصل صدیقی نے فل کورٹ تشکیل دینے کی متفرق درخواست دائر کی ہے۔

درخواست میں مؤقف اپنایا گیا کہ ماضی میں بھی فوجی ٹرائل سے متعلق کیس 9 ممبرز بینچ یا فل کورٹ نے ہی سنا ہے، وفاقی حکومت نے بھی فل کورٹ بنانے کی استدعا کی جس کو مسترد کر دیا گیا، حکومت کے کئی وزرا بھی موجودہ بینچ پر پبلک میں تنقید کر چکے۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ فل کورٹ کے فیصلے پر آج تک اسٹیبلشمنٹ سمیت سب نے عمل کیا، بینچ کے رکن جسٹس یحییٰ آفریدی بھی فل کورٹ بنانے کا کہہ چکے ہیں، ضروری نہیں کہ تمام ججز پر مشتمل ہی فل کورٹ ہو، چیف جسٹس پاکستان دستیاب ججز پر مشتمل فل کورٹ بنا کر کیس سنیں۔

درخواست کے متن کے مطابق اٹارنی جنرل پہلے ہی یقین دہانی کرا چکے کہ کسی سویلین کا ٹرائل شروع نہیں ہوا، فل کورٹ کا فیصلہ آنے سے سویلین کا فوجی عدالت میں ٹرائل کا معاملہ ایک ہی بار حل ہو جائے گا۔

سویلینزکے فوجی عدالتوں میں ٹرائل کے کیس کی سماعت کل ہوگی۔

مزید خبریں :