شہریار آفریدی اور شاندانہ گلزارکی ایم پی او آرڈرز کالعدم قراردینے کی درخواستوں پرفیصلہ محفوظ

اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس بابر ستار نے درخواستوں پرسماعت کی جس دوران ڈپٹی کمشنر اسلام آباد کے ایم پی او آرڈر جاری کرنے کے اختیار پر بھی دلائل مکمل کیے گئے/ فائل فوٹو
اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس بابر ستار نے درخواستوں پرسماعت کی جس دوران ڈپٹی کمشنر اسلام آباد کے ایم پی او آرڈر جاری کرنے کے اختیار پر بھی دلائل مکمل کیے گئے/ فائل فوٹو

اسلام آباد ہائیکورٹ نے پی ٹی آئی رہنما شہریار آفریدی اور شاندانہ گلزارکی ایم پی او آرڈرز کالعدم قراردینے کی درخواستوں پرفیصلہ محفوظ کرلیا۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس بابر ستار نے درخواستوں پرسماعت کی جس دوران ڈپٹی کمشنر اسلام آباد کے ایم پی او آرڈر جاری کرنے کے اختیار پر بھی دلائل مکمل کیے گئے۔

درخواست گزارکے وکیل شیرافضل مروت پیش نہ ہوئے جس پر انہیں تحریری دلائل جمع کرانےکی ہدایت کی گئی۔

ڈپٹی کمشنراسلام آباد کے اختیارات سے متعلق عدالت نے دوعدالتی معاونین مقررکیے تھے، دونوں عدالتی معاونین بیرسٹر صلاح الدین اور وقار رانا عدالت میں دلائل دے چکے ہیں۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے شہریارآفریدی اور شاندانہ گلزارکے خلاف ایم پی او آرڈر معطل کررکھا ہے اور ڈپٹی کمشنر اسلام آباد کو مزید ایم پی او آرڈرجاری کرنے سے بھی روک رکھا ہے۔

اب عدالت نے پی ٹی آئی رہنما شہریار آفریدی اور شاندانہ گلزارکی ایم پی او آرڈرز کالعدم قراردینے کی درخواستوں پرفیصلہ محفوظ کرلیا۔

مزید خبریں :