Election 2024 Election 2024

کے الیکٹرک سمیت بجلی کمپنیوں کی جانب سے ایوریج بل بھیجنے اور 30 دن سے زائد بلنگ کرنے کا انکشاف

کمپنیوں کی جانب سے 30دن سے زائد کی بلنگ کرنے سے لاکھوں صارفین متاثر ہوئے، نیپرا نے کے الیکٹرک سمیت تمام بجلی کمپنیوں کےخلاف قانونی کارروائی کا فیصلہ کرلیا: اعلامیہ— فوٹو:فائل
کمپنیوں کی جانب سے 30دن سے زائد کی بلنگ کرنے سے لاکھوں صارفین متاثر ہوئے، نیپرا نے کے الیکٹرک سمیت تمام بجلی کمپنیوں کےخلاف قانونی کارروائی کا فیصلہ کرلیا: اعلامیہ— فوٹو:فائل

کے الیکٹرک سمیت بجلی کمپنیوں کی جانب سے ایوریج بل بھیجنے اور 30 دن سے زائد بلنگ کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔

نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) کی انکوائری کمیٹی نے بجلی کمپنیوں کی جانب سے اووربلنگ پر تحقیقات مکمل کرلیں۔

اعلامیے کے مطابق تحقیقات میں بجلی کمپنیوں کی جانب سے ایوریج بل بھیجنے اور 30 دن سے زائد بلنگ کرنے کا انکشاف ہوا ہے جس کے بعد نیپرا نے کے الیکٹرک سمیت تمام بجلی کمپنیوں کےخلاف قانونی کارروائی کا فیصلہ کرلیا۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ کمپنیوں کی جانب سے 30 دن سے زائد کی بلنگ کرنے سے لاکھوں صارفین متاثر ہوئے، خراب میٹرز بروقت تبدیل نہ کرنے سے بجلی کمپنیوں نے ایوریج بل بھیجے۔

نیپرا کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ملتان الیکٹرک پاور کمپنی(میپکو) نے جولائی میں 57 لاکھ سے زائد صارفین کو 30 دن سے زیادہ کے بل بھیجے جبکہ اگست میں  22 لاکھ 65 ہزار 271 صارفین کو اوور بلنگ کی۔

نیپرا کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ میپکو نے اگست میں 1لاکھ 38 ہزار 723صارفین کو بغیر تصویر کے بل بھیجے۔

رپورٹ کے مطابق گوجرانوالہ الیکٹرک پاور کمپنی (گیپکو) نے جولائی میں 4 لاکھ 63 ہزار 360 صارفین کو 30 دن سے زائد کے بل بھیجے جبکہ اگست میں 11 لاکھ 92 ہزار 62 صارفین کو 30 دن سے زائد کی اوور بلنگ کی۔

اسی طرح فیصل آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی (فیسکو) نے اگست میں 8 لاکھ 44 ہزار 58 صارفین کو ایک ماہ سےزائد کے بل بھجوائے۔

نیپرا کی رپورٹ کے مطابق  لاہور الیکٹرک سپلائی کمپنی(لیسکو) نے جولائی میں 6 لاکھ 85 ہزار 588 صارفین کو 30 دن سے زیادہ کے جبکہ اگست میں 6 لاکھ 50 ہزار 460 صارفین کو اوور بلنگ کی۔

لیسکو نے جولائی میں 1 لاکھ 23 ہزار 440 صارفین کو بغیر تصویر کے اور اگست میں 1 لاکھ 26 ہزار صارفین کو بغیر تصویر کے بل بھجوائے۔

نیپرا کی رپورٹ کے مطابق حیدرآباد الیکٹرک سپلائی کمپنی(حیسکو) نے جولائی میں 5 لاکھ 21 ہزار 624 صارفین کو 30 دن سے زائد کے بل جبکہ اگست میں 2 لاکھ 8 ہزار 481 صارفین کو زائد دنوں کے بل بھجوائے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ کوئٹہ الیکٹرک سپلائی کمپنی(کیسکو)نے جولائی میں 1 لاکھ 16 ہزار 255 صارفین کو اووربلنگ کی جبکہ جولائی میں 1 لاکھ 16 ہزار 255 صارفین کو بغیر تصویر والے بل بھجوائے گئے ۔

اس کے علاوہ سکھر الیکٹرک پاور کمپنی(سیپکو) نے اگست میں 3 لاکھ 25 ہزار 764 صارفین کو زائد دنوں کے بل بھجوائے۔

نیپرا کی رپورٹ کے مطابق جولائی میں کے الیکٹرک کے 77 ہزار 869 صارفین کو غلط تصویر والے بل بھجوائے گئے۔

کے الیکٹرک نے اگست میں 65 ہزار 675 صارفین کو غلط تصویر والے بل بھجوائے۔

رپورٹ میں قرار دیا گیاکہ بجلی کمپنیوں نے اپنی نااہلی چھپانے کیلئے جان بوجھ کر بددیانتی کی اور بجلی کمپنیوں کی نااہلی سے کم بجلی استعمال کرنے والوں کو زیادہ بل بھیجے گئے۔

نیپرا رپورٹ کے مطابق اس اقدام سے بجلی کمپنیوں کو بلوں کی وصولی کم رہی۔

نیپرا نے بجلی کمپنیوں کو نوٹس بھیج کر وضاحت طلب کرلی ہے اور 30 دنوں میں خراب میٹرز کو تبدیل کرنے کی ہدایت کی ہے۔

اعلامیے کے مطابق خراب میٹرز کو جلد از جلد تبدیل کرنے، غلط بلوں کو درست کرنے کا حتمی وقت دے دیا گیا ہے بصورت دیگر مقررہ وقت تک عملدرآمد نہ کرنے پرکمپنیوں کےخلاف کارروائی کی جائے گی۔

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پالیسی کے مطابق میٹرزتبدیل نہ کرنے پر کے الیکٹرک کو نوٹس جاری کردیا گیا ہے اور معاملے پر کے الیکٹرک سے وضاحت طلب کرلی ہے۔

مزید خبریں :