Election 2024 Election 2024

ابرار احمد کیا آسٹریلیا روانگی سے پہلے ہی ’ان فٹ‘ تھے؟

ابرار احمد نے اس سال قائد اعظم ٹرافی میں وکٹ کیپر سرفراز احمد کی قیادت میں کراچی وائٹس کیلئے صرف ایک میچ کھیلا— فوٹو:فائل
ابرار احمد نے اس سال قائد اعظم ٹرافی میں وکٹ کیپر سرفراز احمد کی قیادت میں کراچی وائٹس کیلئے صرف ایک میچ کھیلا— فوٹو:فائل

کینبرا میں آسٹریلین پرائم منسٹر الیون کے خلاف 4 روزہ میچ میں دائیں ہاتھ کے لیگ بریک گگلی بولر ابرار احمد کے پاؤں میں تکلیف کے بعد سامنے آنے والی خبر کے بعد ایک عام تاثر یہی ہے کہ 14 دسمبر سے پرتھ میں آسٹریلیا کے خلاف پہلے ٹیسٹ میں ان کی شرکت کا امکان نہیں ہے کیونکہ اطلاعات ہیں کہ بورڈ نے دائیں ہاتھ کے آف بریک بولر ساجد خان کو آسٹریلیا روانہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اُدھر 25 سالہ ابرار احمد جنہوں نے 6 ٹیسٹ میں 31.07 کی اوسط سے 38 وکٹیں حاصل کی ہیں، ان کی پاؤں کی تکلیف کے بعد سوال اٹھ رہے ہیں کہ کیا وہ ان فٹ آسٹریلیا گئے ہیں؟ ذرائع کے مطابق لیگ بریک گگلی بولر کو پاؤں میں تکلیف کی پرانی شکایت ہے، راولپنڈی میں آسڑیلیا روانگی سے قبل لگنے والے کیمپ میں بھی ایک بار ابرار احمد پاؤں میں تکلیف کی شکایت کر چکے ہیں۔

ابرار احمد نے اس سال قائد اعظم ٹرافی میں وکٹ کیپر سرفراز احمد کی قیادت میں کراچی وائٹس کیلئے صرف ایک میچ کھیلا جہاں 53.1 اوورز میں انھوں نے 175 رنز دے کر 6 وکٹیں لیں تھی۔

ابرار احمد اس سال بھارت میں منعقدہ آئی سی سی ورلڈ کپ میں پی سی بی کے تین ٹریول ریزرو میں شامل تھے، کینبرا میں آسٹریلین پرائم منسٹر الیون کے خلاف دائیں ہاتھ کے لیگ بریک گگلی بولر نے میچ کے دوسرے دن 19 اوورز کروائے، البتہ تیسرے دن آٹھ اوورز کروا کر وہ میدان سے پاؤں کی تکلیف کے سبب باہر چلے گئے جس کے بعد کپتان شان مسعود نے سعود شکیل اور امام الحق سے اسپن بولنگ کروائی۔

ٹیم منیجمنٹ کو ابرار احمد کی ایم آر آئی رپورٹ کی تفصیل کا انتظار ہے جس کے بعد ان کے آسٹریلیا میں دوران ٹیسٹ سیریز رہنے کا فیصلہ ہوگا۔ ابتدائی اطلاعات کے مطابق قومی ٹیم کے فزیو تھراپسٹ کلف ڈکن نے ابرار احمد کے پاؤں کی تکلیف کو سنجیدہ نوعیت کی قرار نہیں دیا ہے۔

مزید خبریں :