Election 2024 Election 2024

دنیا
Time 04 فروری ، 2024

چلی میں جنگلات کی خوفناک آتشزدگی سے کم از کم 51 افراد ہلاک، ہنگامی حالات کا نفاذ

فائر فائٹرز ایک مقام پر آگ پر قابو پانے کی کوشش کر رہے ہیں / اے پی فوٹو
فائر فائٹرز ایک مقام پر آگ پر قابو پانے کی کوشش کر رہے ہیں / اے پی فوٹو

جنوبی امریکی ملک چلی میں جنگلات میں خوفناک آتشزدگی کے نتیجے میں 51 ہلاکتوں کے بعد ایمرجنسی کے نفاذ کا اعلان کیا گیا ہے۔

چلی کے وسطی اور جنوبی حصوں میں ہنگامی حالات کا نفاذ کیا گیا جبکہ حکام نے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔

چلی کے صدر Gabriel Boric نے ٹیلی ویژن سے خطاب کے دوران بتایا کہ موجودہ حالات بہت المناک ہیں اور آئندہ چند گھنٹوں میں ہلاکتوں میں مزید اضافے کا خدشہ ہے۔

انہوں نے بتایا کہ متاثرہ علاقوں میں مزید فوجی دستے تعینات کیے جائیں گے جبکہ لوگوں کے تحفظ کے لیے ہر ممکن اقدامات کیے جائیں گے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق چلی کے وسطی اور جنوبی صوبوں میں 92 مقامات پر لگی آگ کے نتیجے میں ایک لاکھ ایکڑ سے زائد اراضی چل کر خاک ہوچکی ہے۔

حکام نے بتایا کہ فائر فائٹرز نے 40 مقامات پر آگ پر قابو پالیا ہے جبکہ 29 مقامات پر کام جاری ہے۔

چلی میں ایک جگہ آتشزدگی سے ہونے والی تباہی / اے ایف پی فوٹو
چلی میں ایک جگہ آتشزدگی سے ہونے والی تباہی / اے ایف پی فوٹو

چلی کے مختلف مقامات میں درجہ حرارت 40 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچنے کے باعث جنگلات میں آگ لگی، مگر آگ کے حوالے سے اب تک کم از کم ایک فرد کو حراست میں لیا گیا ہے۔

اس شخص پر الزام ہے کہ وہ ویلڈنگ کا کام کر رہا تھا جس کے دوران حادثاتی طور پر آگ پھیل کر قریبی گھاس کے میدان تک پہنچ گئی۔

فائر فائٹرز کی جانب سے چلی کے ساحلی شہر Valparaíso میں لگی آگ پر قابو پانے کو ترجیح دی جا رہی ہے کیونکہ وہ شہری علاقوں سے قریب ہے اور وہاں 372 افراد گمشدہ ہیں۔

اس شہر میں لگی آگ سے اب تک 11 سو مکانات کو نقصان پہنچا ہے۔

مزید خبریں :