Can't connect right now! retry

کھیل
25 جون ، 2019

ورلڈکپ: انگلینڈ کو شکست، آسٹریلیا سیمی فائنل میں پہنچنے والی پہلی ٹیم بن گئی

کینگروز نے انگلش ٹیم کو 64 رنز سے شکست دی جب کہ جیسن بہرینڈوف نے 5 اور مچل اسٹارک نے 4 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا — فوٹو: آئی سی سی 

لندن: ورلڈ کپ کے 32 ویں میچ میں آسٹریلیا نے انگلینڈ کو 64 رنز سے شکست دیکر سیمی فائنل میں جگہ بنالی۔

آسٹریلیا کے 286 رنز کے ہدف کے تعاقب میں انگلینڈ کی ٹیم 45 ویں اوور میں 221 رنز پر ڈھیر ہوگئی۔

لندن میں لارڈز کے گراؤنڈ میں کھیلے گئے میچ میں انگلش ٹیم کے کپتان اوئن مورگن نے ٹاس جیت کر فیلڈنگ کا فیصلہ کیا لیکن آسٹریلین اوپنرز نے ایک بار پھر اپنی ٹیم کو شاندار آغاز فراہم کیا۔

آسٹریلین اوپنرز نے ابتدائی اوورز میں محتاط انداز میں بیٹنگ کرتے ہوئے اپنی ٹیم کو 123رنز کا آغاز دیا جس کے بعد بائیں ہاتھ کے اوپنر ڈیوڈ وارنر 53 رنز بنا کر معین علی کا شکار بنے۔

شاندار سنچری کے بعد ایرون فنچ کا انداز  — فوٹو: آئی سی سی 

ڈیوڈ وارنر رواں ورلڈ کپ میں 500 رنز کے ساتھ سب سے زیادہ رنز بنانے والے بلے باز بن گئے ہیں۔

جس کے بعد آنے والے بلے باز عثمان خواجہ نے کپتان ایرون فنچ کے ساتھ 50رنز کی پارٹنر شپ قائم کی جس کے بعد 173 کے مجموعی اسکور پر عثمان خواجہ 23رنز بنا کر بین اسٹوکس کی گیند پر بولڈ ہو گئے۔

کپتان ایرون فنچ نے شاندار سنچری اسکور کرتے ہوئے ٹورنامنٹ میں دوسری سنچری بنائی اور اس کے بعد آرچر کی گیند پر 100 رنز بنا کر کیچ آوٹ ہوگئے۔

انگلینڈ کی جانب سے کرس ووکس نے 46 رنز دے کر دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جب کہ جوفرا آرچر، مارک ووڈ، بین اسٹوکس اور معین علی نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

— فوٹو: آئی سی سی 

آسٹریلیا کے 286 رنز کے ہدف تعاقب میں انگلش ٹیم کا آغاز مایوس کن رہا اور 53 رنز پر جوئے روٹ اور کپتان اوئن مورگن سمیت 4 کھلاڑی پویلین لوٹے گئے۔ 

پانچویں وکٹ کی شراکت میں جوس بٹلر اور بین اسٹوکس نے 71 رنز بنائے تاہم 124 کے مجموعی اسکور پر بٹلر 25 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

اس کے بعد آنے والے کرس ووکس نے اسٹوکس کے ساتھ ملکر 53 رنز کی پارٹنرشپ بنائی لیکن ذمہ دارانہ بیٹنگ کرنے والے بین اسٹوکس 89 رنز بناکر بولڈ ہوئے۔ 

بین اسٹوکس کے جاتے ہی کوئی بھی کھلاڑی ٹک نہ سکا اور پوری انگلش ٹیم 45 ویں اوور میں 221 رنز پر ڈھیر ہوگئی، یوں انگلینڈ کو 64 رنز سے شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ 

بین اسٹوکس شکست کے بعد افسردہ — فوٹو: آئی سی سی 

اس جیت کے ساتھ ہی دفاعی چیمپئن آسٹریلیا ورلڈکپ کے سیمی فائنل میں پہنچنے والی پہلی ٹیم بن گئی ہے۔ انگلینڈ 2003 کے ورلڈکپ کے بعد سے اب تک آسٹریلیا کو میگا ایونٹ میں ایک بار بھی نہیں ہراسکی ہے۔ 

انگلش ٹیم کی جانب سے بین اسٹوکس 89 اور بیئراسٹو 27 رنز بناکر نمایاں رہے۔ کینگروز کے جیسن بہرینڈوف نے 5 اور مچل اسٹارک نے 4 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

آسٹریلیا ٹورنامنٹ میں سب سے آگے

— فوٹو: آئی سی سی 

آسٹریلیا کی ٹیم اس ایونٹ میں پوری طرح چھائی ہوئی ہے، اعداد و شمار کے مطابق ٹورنامنٹ میں اب تک سب سے زیادہ رنز بنانے والے کھلاڑی آسٹریلوی اوپنر ڈیوڈ وارنر ہیں۔ 

ایک اننگز میں سب سے زیادہ انفرادی اسکور 166 رنز بنانے کا اعزاز بھی ڈیوڈ وارنر کے پاس ہے جب کہ اب تک سب سے زیادہ 19 وکٹیں بھی آسٹریلوی فاسٹ بولر مچل اسٹارک نے لی ہیں۔ 

کینگروز کی یہی کارکردگی برقرار رہی تو انہیں ٹائٹل کے دفاع سے روکنا مشکل ہوجائے گا۔ 

— فوٹو: اسکرین گریب 

آسٹریلیا میگا ایونٹ میں 12 پوائنٹس کے ساتھ پہلی پوزیشن پر ہے، کینگروز نے اب تک 7 میچز کھیلے ہیں جس میں سے 6 میں کامیابی اور ایک میں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM