Can't connect right now! retry

صحت و سائنس
07 جنوری ، 2020

دماغی صحت کو بہتر بنانے کیلیے یہ عادتیں اپنائیں

فوٹو: فائل

دماغی صحت کو بہتر کرنے کی بات ہر پلیٹ فارم پر کی جاتی ہے لیکن کہیں نہ کہیں جب اس پر عمل کرنے کی بات آئے تو بہت سے لوگ ان باتوں کو عملی جامہ پہنانے میں کامیاب نہیں ہو پاتے۔

دماغی صحت کو بہتر بنانے لیے ہمیں بالکل شروعات سے آغاز کرنا ہوگا، اس مسائل سے دوچار لوگوں کو پریشان ہونے کے بجائے چند چھوٹی چھوٹی عادات پر عمل کرنے کی ضرورت ہے۔

ماہرینِ طب نے دماغی صحت کے حوالے سے بے شمار تحقیقات کی ہیں جن سے یہی نتیجہ حاصل ہوا ہے کہ اپنی عادات و اطوار کو تبدیل کر کے دماغ کے ساتھ ساتھ جسمانی صحت کو بھی بہتر کیا جا سکتا ہے۔

آج ہم آپ کو دماغی صحت کو بہتر کرنے کے حوالے سے چند ایسی عادتیں بتانے والے ہیں جن پر عمل کر کے آپ دماغی سکون پا سکیں گے۔

پُرامید رہیں

ایک تحقیق کے مطابق پُرامید رہنے والے لوگوں میں 35 فیصد تک امراضِ قلب اور فالج جیسی جان لیوا بیماریوں کے خطرات کم ہوجاتے ہیں۔

2019 میں کیے جانے والے ایک سروے سے یہ بات معلوم ہوئی کہ ایسے لوگ جو مثبت سوچ کے رکھتے ہیں ان کی زندگی دراز ہوتی ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ پُر امید اور مثبت سوچ دماغ کے نظام کو اس طرح تبدیل کر دیتی ہے جس سے انسان کی صحت بہترین ہو جاتی ہے اور اس کا جسمانی اور دماغی صحت پر اچھا اثر پڑتا ہے۔

عملی طور پر پُرامید رہنے کا ایک طریقہ یہ ہے کہ آپ اپنے دماغ میں یہ تصور کریں کہ آپ کے مستبقل کے تمام تر مسائل حل ہوچکے ہیں اور آپ کی تمام خواہشیں پور ہوگئی ہیں یا جلد پوری ہونے والی ہیں، ایسا سوچنے سے دماغ خود ہی مثبت سوچے گا۔

رضاکارانہ طور پر خدمات کریں

متعدد تحقیقات سے یہ بات ثات ہوئی ہے کہ بغیر کسی مطلب کے دوسروں کو خوش کرنا اور ان کی مدد کرنا دماغ کے لیے بے حد مددگار ثابت ہوا ہے، اس طرح سے کرنے سے دماغ میں اچھے کیمیکلز کی افزائش ہوتی ہے۔

رضاکارانہ خدمات کام کا دباؤ اور ڈپریشن کی کیفیت کو بھی کم کرتا ہے۔

ہمیشہ شکر گزار رہیں

اگر آپ زندگی میں ہمیشہ شکرگزار رہنا چاہتے ہیں تو اس کے لیے ماہرین کی اس تجویز پر ضرور عمل کریں۔

 ماہرین کا کہنا ہے کہ آپ ایک ڈائری بنالیں جس میں روزانہ سونے سے قبل دن بھر کا ایک مثبت تجربہ ضرور لکھیں، یہ ضروری نہیں ہے کہ وہ کوئی بڑی بات ہو، لیکن ایسا روزانہ ضرور کریں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اسکول جانے والے بچے اگر روزانہ اس عادت کو معمول بنا لیں تو ان کے رویّوں میں بڑی تبدیلی آئے گی۔

سماجی تعلقات قائم کریں

ایسے لوگ جو اپنی زندگیوں میں اپنے گھر والوں، رشتہ داروں اور دوستوں کے ساتھ رابطے یا ان سے جڑے رہتے ہیں ایسے لوگ خوش جب کہ ان کی صحت بھی اچھی رہتی ہے۔

 اس بات کا ہرگز یہ مطلب نہیں ہے کہ آپ بے شمار لوگوں سے تعلقات قائم کریں بلکہ اس کا مطلب یہ ہے کہ ایسے لوگوں کے ساتھ اپنے تعلقات قائم رکھیں جن سے آپ کو خوشی مل رہی ہے چاہے وہ ایک ہی کیوں نہ ہو۔

ہر چیز کا مقصد سمجھیے

زندگی میں موجود ہر چھوٹی سے چھوٹی اور بڑی چیز کا مقصد سمجھیے، ایسا کرنے سے آپ ہمیشہ خوش رہیں گے اور اس عادت سے آپ کی دماغی صحت بہتر ہوجائے گی۔

ماہرین نفسیات کا کہنا ہے کہ اگر آپ اپنی زندگی کی چھوٹی چھوٹی چیزوں کا مقصد نہیں سمجھیں گے تو نا خوش اور تنہا رہ جائیں گے۔

اپنی زندگی کی ہر چیز کو با مقصد سمجھتے ہوئے اس کی قدر کرنا سیکھنے کی عادت اپنائیے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM