Can't connect right now! retry

دنیا
12 مارچ ، 2020

ایران میں کورونا سے بچاؤ کیلئے شراب پینے والے 44 افراد ہلاک

ایران میں کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے شراب پینے سے ہلاک افراد کی تعداد 44 ہو گئی۔

ایران کی سرکاری نیوز ایجنسی ارنا کے مطابق لوگوں کی بڑی تعداد اس غلط اطلاع پر شراب پی کہ اس طرح وہ ایران میں بڑے پیمانے پر پھیلے کورونا وائرس سے محفوظ ہو جائیں گے لیکن شراب ان کے لیے زہر ثابت ہوئی۔

ارنا کی رپورٹ کے مطابق غیر قانونی شراب پینے سے سب سے زیادہ 36 ہلاکتیں ایران کے جنوب مشرقی صوبے خزیستان میں ہوئیں جو تین روز قبل تک زیستان میں کورونا وائرس کے باعث ہونے والی براہ راست 18 ہلاکتوں سے دو گنا زیادہ ہے۔

زیستان کے علاوہ شراب پینے سے 7 ہلاکتیں شمالی علاقے البورز اور ایک کرمان شاہ میں ہوئی۔

خیال رہے کہ ایران میں مسلمانوں کے شراب پینے پر سخت پابندی عائد ہے لیکن اس کے باوجود میڈیا پر بڑی تعداد میں اسمگل شدہ شراب پینے کے کیسز رپورٹ ہوتے ہیں۔

ایران چین اور اٹلی کے بعد کورونا وائرس کے باعث سب سے زیادہ متاثر ہونے والا ملک ہے جہاں اب تک 354 افراد ہلاک اور 9000 متاثر ہو چکے ہیں۔

ایران میں کورونا وائرس کے باعث رکن پارلیمنٹ فاطمی رہبر بھی ہلاک ہو چکی ہیں جب کہ ایران کی نائب صدر برائے خواتین میں بھی کورونا وائرس سمیت کئی اراکین پارلیمنٹ میں وائرس کی تصدیق ہو چکی ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM