Can't connect right now! retry

‘کورونا وائرس کی ویکسین بنانے کیلیے 12 سے 18 ماہ درکار ہیں‘

فوٹو: فائل

ادویہ ساز صنعت کی جانب سے یہ توقع کی جا رہی ہے کہ انہیں کورونا وائرس کی ویکسین بنانے کے لیے 12 سے 18 ماہ کا وقت لگ سکتا ہے کیونکہ انہوں نے مشترکہ طور پر یہ وعدہ کیا ہے کہ وہ ویکسین کی ضرورت کے مطابق دنیا بھر میں دستیابی یقینی بنائیں گے۔

ادویات انڈسٹری کے سربراہان اور بین الاقوامی فیڈریشن آف فارماسیوٹیکل مینوفیکچررز اور ایسوسی ایشن نے جنیوا میں منعقدہ ایک ورچوئل پریس کانفرنس میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں پورا اعتماد ہے کہ ٹیکنالوجی اس وبا پر غالب آئے گی۔

سنوفی پیسچر فارماسیوٹیکل کمپنی کے وائس ایگزیکٹو کا کہنا تھا کہ جب آپ اس بارے میں سوچتے ہیں کہ کتنے لوگوں کو یہ ویکسین چاہیے تو  یہ ایک بہت بڑا چیلنج ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں لوگوں کی حفاظت کو یقینی بنانا ہوگا، جب تک اس ویکسین کو مارکیٹ میں رجسٹرڈ نہیں کروالیتے اس وقت تک ہمیں 12 سے 18 ماہ تک لگ سکتے ہیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ سال دسمبر میں چین کے شہر ووہان سے پھیلنے والے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے فوراً بعد ہی دنیا بھر میں ویکسین اور اس کے علاج کے لیے کلینیکل ٹرائلز کیے جا رہے ہیں۔

لیکن صنعت کے سربراہوں کا کہنا ہے کہ مارکیٹ میں کووڈ-19 کی ویکسین کو جلد پیش کرنے کے لیے جانچ کے معیار کو کم نہیں کرسکتے ہیں۔

واضح رہے کہ امریکا کے نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ کی جانب سے دعویٰ کیا گیا تھا کہ انہوں نے ویکیسن کی تیاری کے لیے پہلا مرحلہ تیزی سے طے کیا گیا ہے جو کہ خوش آئند ہے۔

دوسری جانب اسرائیلی سائنسدانوں کا بھی دعویٰ ہے کہ انہوں نے کورونا وائرس کا توڑ ڈھونڈ لیا گیا ہے، صرف پری کلینکل اور کلینکل ٹرائل کے لیے کچھ وقت درکار ہے۔

علاوہ ازیں امریکی ڈرگ اتھارٹی نے ملیریا کی دوا کورونا کےمریضوں پر آزمانے کی منظوری دے دی ہے۔ مزید پڑھیں۔۔

دنیا بھر میں کورونا کی صورتحال 

دنیا بھر میں کورونا وائرس سے ہلاکتیں 10 ہزار سے تجاوزکر گئی ہیں جب کہ دنیا بھر میں وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 2 لاکھ 40 ہزار سے تجاوز کرگئی ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM