Can't connect right now! retry

کاروبار
29 اپریل ، 2020

کورونا ویکسین کی آزمائش کے دوسرے مرحلے سے قبل امریکی کمپنی کے شیئرز کی اونچی اڑان

فوٹو فائل

کورونا ویکسین پر تجربات کا دوسرا مرحلہ شروع ہونے سے پہلے ہی امریکی کمپنی کے شیئرز کی قیمتیں اڑان بھرنے لگیں۔

کورونا وائرس کی نشاندہی کے بعد 6 ہفتوں کے اندر امریکی کمپنی موڈرنا کی تیار کردہ کورونا وائرس کے خلاف پہلی ممکنہ ویکسین کا اب انسانوں پر تجربے کا آغاز ہونے والا ہے۔ 

موڈرنا کمپنی کا کہنا تھا کہ پہلے مرحلے میں نیشنل انسٹیٹوٹ آف الرجی اینڈ انفیکشن ڈیزیز کی جانب سے ویکسین کو محفوظ قرار دے دیا گیا ہے۔

اس ضمن میں پیر کو موڈرنا "moderna" نے امریکی وفاقی ادارے سے ویکسن کی آزمائش کے دوسرے مرحلے کی اجازت مانگی تھی جس میں 600 افراد پر  28 دن کے فرق سے دو بار انجیکشن دیے جانے ہیں۔

 اس اعلان کے ساتھ ہی موڈرنا کے شیئرز نے اچانک 7 فیصد کی اونچی چھلانگ لگائی لیکن مارکیٹ میں مندی کے باعث موڈرنا کے شیئرز کی قیمتیں بھی برقرار نہ رہ سکیں۔

خیال رہے موڈرنا ان درجن بھر امریکی بائیو ٹیک کمپنیوں میں سے ایک ہے جو کووڈ 19 کی ویکسین پر کام کر رہی ہے۔

ابھی تک اس وائرس کو ختم کرنے کے لیے کوئی ویکسین دستیاب نہیں ہے لیکن دنیا بھر کے سائنسدان ویکسین تیار کرنے کی سر توڑ کوشش کر رہے ہیں، کچھ ممالک میں ویکسین کا انسانوں پر ٹرائل بھی شروع کر دیا گیا ہے۔

دنیا بھر میں کورونا وائرس کی صورتحال 

دنیا بھر میں متاثرہ افراد کی تعداد 31 لاکھ 47 ہزار 626 ہو چکی جس میں سے 9 لاکھ 61 ہزار سے زائد افراد صحت یاب بھی ہو چکے ہیں جب کہ اموات کی مجموعی تعداد 2 لاکھ 18 ہزار سے تجاوز کر گئی ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM