Can't connect right now! retry

گوگل سرچ میں نیا مصنوعی ذہانت ٹول شامل کرنے کا اعلان

فوٹو: فائل 

دنیا کے مقبول ترین سرچ انجن گوگل کے سرچ میں نئے  آرٹیفیشل انٹیلیجنس (مصنوعی ذہانت) کے ٹول کو جلد شامل کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

گوگل کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ سرچ انجن میں یہ نئی تبدیلی اگلے چند ماہ یا ہفتوں میں تمام صارفین کو فراہم کی جائے گی۔

گوگل سرچ کا نیا ٹول کیا ہے؟

گوگل کے مطابق سرچ انجن میں جلد شامل ہونے والی یہ نئی تبدیلی آرٹیفیشل انٹیلیجنس (مصنوعی ذہانت) اور مشین لرننگ تکنیک کے ذریعے کام کرے گا جس سے صارفین کو کچھ بھی سرچ کرنے پر پہلے سے بہتر نتائج ملیں گے۔

سب سے خاص بات یہ ہے کہ اب گوگل پر آپ جتنی بھی غلط اسپیلنگ لکھیں گے تو اس کے باوجود بھی یہ آپ کو درست نتائج فراہم کرے گا۔

گوگل کے سرچ ہیڈ پرابھاکر رگھاون کا کہنا ہے کہ گوگل پر روزمرہ سرچ کی جانے والی چیزوں میں سے 15 فیصد کی اسپیلنگ بلکل غلط ہوتی ہیں جسے کمپنی نے کبھی بھی نہیں دیکھا ہوتا ہے اور ہم اُس اسپیلنگ کے نتائج کو درست کرنے کی کوشش کر رہے ہوتے ہیں۔

گوگل کا کہنا ہے کہ اس تبدیلی کو سرچ انجن میں شامل کرنے کا مقصد ہی غلط اسپیلنگ ہے، گوگل پر ہر 10 سرچ میں سے ایک سرچ کی اسپیلنگ غلط ہوتی ہے۔

گوگل کا دعویٰ ہے کہ یہ تبدیلی اس ماہ کے آخر میں سرچ انجن میں شامل کر لی جائے گی جس سے صارفین کو ایک سرچ کے بعد 3 ملی سیکنڈ میں نتائج مل سکیں گے جب کہ غلط اسپیلنگ کے باوجود بھی صارفین کو بہتر نتائج ملیں گے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM