Can't connect right now! retry

دنیا
24 نومبر ، 2020

اسرائیل نے سعودی عرب سے آنیوالوں کیلئے قرنطینہ کی شرط ختم کردی

اسرائیل نے سعودی عرب کا نام کورونا قرنطینہ کی 'سرخ فہرست' والے ملکوں سے نکال دیا ہے۔

خبر ایجنسی کے مطابق سعودی عرب کا نام وزیراعظم نیتن یاہو کے مبینہ دورہ سعودی عرب کی خبروں کے بعد نکالا گیا ہے۔

اسرائیلی اخبار ٹائمز آف اسرائیل کے مطابق اسرائیلی وزارت صحت نے سعودی عرب کا نام سرخ فہرست سے نکال کر سبز فہرست میں ڈال دیا ہے جس کا مطلب یہ ہےکہ سعودی عرب سے آنے والے مسافروں پر اسرائیل میں داخلے کے بعد14روز کا قرنطینہ لازمی نہیں ہوگا۔

اسرائیلی اخبار کے مطابق حکام کی جانب سے یہ فیصلہ خصوصی طور پر وزیراعظم نیتن یاہو کے لیےکیا گیا جوکہ ایک روز قبل ہی  وفد کے ہمراہ خلیجی ملک کا دورہ کرکے واپس لوٹے ہیں۔

  خیال رہے کہ گذشتہ روز ایک امریکی اخبار نے دعویٰ کیا تھاکہ اسرائیلی وزیراعظم بن یامین نیتن یاہو نے سعودی عرب کے خفیہ دورے میں سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان اور امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو سے ملاقات کی ہے۔

امریکی اخبار کے مطابق نیتن یاہوکے ہمراہ اسرائیل کی انٹیلی جنس ایجنسی کے سربراہ یوسی کوہن بھی ملاقات میں موجود تھے۔

اس ملاقات کے حوالے سے اسرائیلی میڈیابھی دعوے کررہا ہے تاہم اسرائیلی حکام کی جانب سے باضابطہ تصدیق نہیں کی گئی جب کہ دوسری جانب سعودی عرب نے اس خبر کی تردید کی ہے۔

 سوشل میڈیا پر جاری بیان میں سعودی وزیر خارجہ فیصل بن فرحان کاکہنا تھا کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان اور اسرائیلی حکام کے درمیان ملاقات کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں۔

ان کا کہنا تھاکہ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کے دورہ سعودی عرب کے دوران ایسی کوئی ملاقات نہیں ہوئی، ملاقات میں صرف امریکی اور سعودی حکام شریک تھے۔

واضح رہےکہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور وزیر خارجہ مائیک پومپیو گزشتہ کئی عرصے سے عرب ممالک کے اسرائیل کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کے لیے کوشاں ہے۔

حال ہی میں امریکا کی ثالثی کی بدولت، متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان تعلقات بحال ہوئے اور پھر بحرین اور سوڈان نے بھی اسرائیل کے ساتھ تعلقات بحال کرنے کا اعلان کردیا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM