پاکستان
21 فروری ، 2022

سندھ ہائیکورٹ کا گٹکے اور ماوے کیخلاف کارروائی جاری رکھنے کا حکم

گٹکے اور ماوے کی فروخت ملوث پولیس اہلکاروں اور افسران کیخلاف کارروائی سے متعلق آئی جی سندھ سےرپورٹ طلب کرلی/ فائل فوٹو
گٹکے اور ماوے کی فروخت ملوث پولیس اہلکاروں اور افسران کیخلاف کارروائی سے متعلق آئی جی سندھ سےرپورٹ طلب کرلی/ فائل فوٹو

کراچی: سندھ ہائیکورٹ نے گٹکے اور ماوے کی فروخت کے خلاف کارروائی جاری   رکھنے کا حکم  دیا ہے۔

سندھ ہائیکورٹ میں گٹکے اور  ماوے کی خریدو فروخت میں ملوث پولیس اہلکاروں کیخلاف کارروائی سے متعلق درخواست  کی  سماعت ہوئی جس میں عدالت  نے اس دھندے میں ملوث پولیس اہلکاروں اور افسران کیخلاف کارروائی سے متعلق آئی جی سندھ سےرپورٹ طلب کرلی۔

عدالت نے گٹکا اور ماوا فروشوں کی پولیس سرپرستی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جو افسران اور اہلکار گٹکے کی خریدوفروخت میں ملوث ہیں ان کے خلاف کارروائی کی جائے، گٹکے اور ماوے کی فروخت سے کینسر جیسی خطرناک بیماریاں پھیل رہی ہیں۔

دورانِ سماعت  پولیس نے بتایا کہ گٹکا ماوا فروشوں سے ڈیلنگ کرانے والے ایس ایس پی مٹیاری آصف بگھیو کو معطل کردیا گیا ہے،آئی جی سندھ نے آصف بگھیو کے خلاف تحقیقات کا حکم دیا ہے۔

عدالت  نے کہا کہ آصف بگھیو کے علاوہ جو جو پولیس اہلکار اور افسران اس دھندے میں ملوث ہیں ان کے خلاف کارروائی کی جائے۔

عدالت  نے گٹکا اور ماوا فروشوں کے خلاف کارروائی جاری رکھنے کا حکم دیتے ہوئے 18   اپریل کو تفصیلی رپورٹ طلب کرلی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM