میٹا کی سی او او شیرل سینڈبرگ کا کمپنی چھوڑنے کا اعلان

شیرل سینڈبرگ / اے پی فوٹو
شیرل سینڈبرگ / اے پی فوٹو

میٹا (فیس بک کا نیا نام) کی چیف آپریٹنگ آفیسر (سی او او) شیرل سینڈبرگ نے سوشل میڈیا کمپنی کو چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔

یہ اعلان انہوں نے اپنے فیس بک پیج پر ایک پوسٹ میں کیا۔

انہوں نے بتایا کہ وہ 2022 کے موسم خزاں میں سی او او کے عہدے کو چھوڑ دیں گی مگر بورڈ آف ڈائریکٹرز کا حصہ رہیں گی۔

میٹا سے شیرل سینڈبرگ کی علیحدگی اس وقت ہورہی ہے جب اس کمپنی کو پرائیویسی اور گمراہ کن تفصیلات کے پھیلاؤ کے حوالے سے متعدد تنازعات کا سامنا ہے۔

14 سال تک کمپنی کا حصہ رہنے والی شیرل سینڈبرگ کو بھی بطور سی او او تنقید کا سامنا رہا۔

شیرل سینڈبرگ نے فیس بک پوسٹ میں کہا کہ ہم نے جو پراڈکٹس تیار کیں انہوں نے دنیا بھر میں اثرات مرتب کیے، تو یہ ہماری ذمہ داری ہے کہ لوگوں کی پرائیویسی کا تحفظ ہو۔

انہوں نے کہا کہ 'جب میں نے 2008 میں یہ کام شروع کیا تو میرا خیال تھا کہ اس عہدے پر 5 سال تک کام کروں گی، اب 14 سال بعد وقت آگیا ہے کہ میں اپنی زندگی کے نئے باب کا آغاز کروں'۔

میٹا کے سی ای او مارک زکربرگ نے ایک فیس بک پوسٹ میں بتایا کہ شیرل سینڈبرگ کی جگہ کمپنی کے چیف گروتھ آفیسر جویر اولیویان لیں گے۔

فیس بک کا حصہ بننے سے قبل شیرل سینڈبرگ گوگل میں گلوبل آن لائن سیلز اینڈ آپریشن کی نائب صدر تھیں۔

2013 میں انہوں نے اپنی پہلی کتاب تحریر کی تھی جو بہت زیادہ مقبول ہوئی تھی جبکہ شوہر ڈیو گولڈبرگ کی اچانک موت کے بعد بھی انہوں نے ایک کتاب تحریر کی تھی۔

انہوں نے اپنی فیس بک پوسٹ میں کہا کہ وہ نہیں جانتی کہ مستقبل میں ان کے لیے کیا چھپا ہے مگر اب وہ اپنی توجہ فلاحی کاموں پر مرکوز کریں گی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM