پاکستان
24 جون ، 2022

سپر ٹیکس کیا ہے؟ وزیر خزانہ نے وضاحت کردی

تمام سیکٹرز پر 4 فیصد اور 13 مخصوص سیکٹرز پر 10 فیصد سپر ٹیکس لگایا گیا ہے: وزیر خزانہ/ فائل فوٹو
تمام سیکٹرز پر 4 فیصد اور 13 مخصوص سیکٹرز پر 10 فیصد سپر ٹیکس لگایا گیا ہے: وزیر خزانہ/ فائل فوٹو

اسلام آباد: وزیراعظم شہباز شریف  کی جانب سے  بڑی انڈسٹریز پر سپر ٹیکس لگانے کے بعد وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے اس حوالے سے وضاحت کی ہے۔

قومی اسمبلی میں اظہار  خیال کرتے ہوئے مفتاح اسماعیل نے کہا کہ تمام سیکٹرز  پر  4 فیصد اور  13 مخصوص سیکٹرز  پر  10 فیصد سپر ٹیکس لگایا گیا ہے جس کے بعد ان سیکٹرز پر ٹیکس 29 فیصد سے 39 فیصد ہو جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ یہ ٹیکس بجٹ خسارے میں کمی کے لیے ایک بار لگایا گیا ہے۔

اس سے قبل وزیر اعظم  نے معاشی ٹیم کے اجلاس کے بعد گفتگو کرتے ہوئے بتایا  تھا کہ عام آدمی کو ٹیکس سےبچانے کے لیے  صنعتوں پرٹیکس لگایا ہے، سیمنٹ، اسٹیل، شوگرانڈسٹری، آئل اینڈگیس، ایل این جی ٹرمینل، فرٹیلائزر، بینکنگ، ٹیکسٹائل، آٹوموبائل، کیمیکل، بیوریجز اور سگریٹ انڈسٹری پر بھی 10 فیصد سپر ٹیکس لگے گا۔

انہوں نے کہا کہ سالانہ 15کروڑ روپے سے زائد آمدن کمانے والے پرایک فیصد،  20 کروڑ روپے سالانہ سے زائد آمدن والے پر2 فیصد، 25 کروڑ روپے سالانہ سے زائد آمدن والے پر3 فیصد اور 30 کروڑ روپے سالانہ سے زائد آمدن والے پر4 فیصد ٹیکس لگایا جائے گا جو غربت میں کمی کا ٹیکس ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM