پاکستان
29 جون ، 2022

واپسی کیلئے کسی لیگی رہنما کی اجازت نہیں چاہیے، نوازشریف کا حکم کافی ہے: اسحاق ڈار

میرے خلاف ایک ہی کیس ہے جو جھوٹ پر مبنی ہے، وطن واپسی سے پہلے میرے وکلاء عدالت سے حفاظتی ضمانت کیلئے رجوع کریں گے، لیگی رہنما— فوٹو: فائل
میرے خلاف ایک ہی کیس ہے جو جھوٹ پر مبنی ہے، وطن واپسی سے پہلے میرے وکلاء عدالت سے حفاظتی ضمانت کیلئے رجوع کریں گے، لیگی رہنما— فوٹو: فائل

سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا کہنا ہے کہ انہوں نے پاکستان واپسی کا فیصلہ نواز شریف کے کہنے پر کیا۔

لندن میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا کہ میری وطن واپسی میں وزیراعظم شہباز شریف کی رضامندی شامل ہے ، نواز شریف کے حکم پر پاکستان جارہا ہوں، جولائی کے چوتھے ہفتے میں پاکستان جارہا ہوں۔

اسحاق ڈار نے مزید کہا کہ نیا پاکستانی پاسپورٹ مل چکا ہے، ڈاکٹر نے بھی اجازت دے دی ہے، پاکستان واپسی کیلئے کسی لیگی رہنما کی اجازت نہیں چاہیے، نواز شریف کا حکم کافی ہے، مجھے تحریک انصاف کی حکومت نے انتقام کا نشانہ بنایا۔

ن لیگی رہنما نے کہا کہ میرے خلاف ایک ہی کیس ہے جو جھوٹ پر مبنی ہے، وطن واپسی سے پہلے میرے وکلاء عدالت سے حفاظتی ضمانت کیلئے رجوع کریں گے، پاکستان پہنچ کر سینیٹر کا حلف اٹھاؤں گا، وزیر خزانہ بنانے کا فیصلہ پارٹی کرے گی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM