کاروبار
03 اگست ، 2022

ملکی تاریخ میں پہلی بار ڈالرکے مقابلے میں روپےکی قدر میں سب سے زیادہ اضافہ

اوپن مارکیٹ میں ڈالر 14 روپے 50 پیسے سستا ہوکر 226 روپے کا ہوگیا/ فائل فوتو
اوپن مارکیٹ میں ڈالر 14 روپے 50 پیسے سستا ہوکر 226 روپے کا ہوگیا/ فائل فوتو

انٹر بینک میں امریکی ڈالر کو ریورس گئیر لگ گیا جس کے بعد ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں اضافہ ہوا ہے۔

بدھ کے روز کاروبار کے آغاز پر امریکی ڈالر کے سامنے روپے کی قدر میں بہتری دیکھنے میں آئی اور ڈالر مسلسل نیچے رہا۔

انٹربینک میں کاروبار کے دوران ڈالر کی قدر  میں 11 روپے 38 پیسے کی کمی ہوگئی اورانٹربینک میں ایک ڈالر 227 روپے پر آگیا۔

انٹربینک میں کاروبار کے اختتام تک ڈالر کی قدر میں مجموعی طور پر 9  روپے 58  پیسے کمی آئی جس سے ڈالر 228 روپے 80 پیسے پر بند ہوا۔

اسٹیٹ بینک کےمطابق بدھ کے روز ڈالر کی قد میں 4.19 فیصد کمی واقع ہوئی۔

دوسری جانب اوپن مارکیٹ میں بھی ڈالر کی قدر  میں تیزی سے کمی ہوئی اور  روپیہ تگڑا ہوگیا، اوپن مارکیٹ میں آج ڈالرکا بھاؤ 11.50 روپےکم ہوکر 229 روپے ہوگیا ہے۔

خیال رہے کہ چند  روز سے انٹربینک میں ڈالر کی قدر میں کمی دیکھی جارہی ہے اور گزشتہ روز انٹربینک میں کاروبار کے اختتام پر ڈالر کا بھاؤ 46 پیسے کم ہوکر 238 روپے 38 پیسے رہا تھا۔

اس سے قبل انٹربینک میں ڈالر کی اونچی اڑان کا سلسلہ جاری تھا اور ایک ڈالر کی قیمت 240 روپے تک جا پہنچی تھی۔

معاشی تجزیہ کاروں کی گفتگو

معاشی تجزیہ کار محمد سہیل نے جیونیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آئی ایم ایف کی جانب سے بورڈ میٹنگ کے اعلان کے بعد صورتحال  میں بہتری آئی ہے اور ڈالر نیچے آیا ہے۔

معاشی تجزیہ کار خرم شہزاد نے کہا کہ آئی ایم ایف بورڈ میٹنگ کی وجہ سے ہی غیریقینی صورتحال تھی، میٹنگ کی تاریخ سامنے آنا ایک بڑی ڈیولپمنٹ ہے، بورڈ میٹنگ کے بعد 1.2 بلین ڈالر آئیں گے جس کے بعد ہی تمام دوست  ممالک سمیت دیگر بینک پیسے دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ آئندہ دو سے تین ماہ میں ہمارے پاس ڈالر زیادہ ہوں گے، ایک اچھی چیز یہ ہےکہ عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمت  کم ہورہی ہے، اس کے علاوہ اسٹیٹ بینک کے ساتھ مل کر امپورٹس کم کرنے کا بھی اثر پڑا ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM