دنیا
03 اگست ، 2022

امریکا کی سعودیہ اور یو اے ای کو میزائل ڈیفنس سسٹم دینے کی منظوری

ڈیفنس میزائل سسٹم کی فراہمی کا اعلان امریکی صدر جوبائیڈن کے دورہ سعودی عرب کے بعد کیا گیا ہے جبکہ اس سے قبل بائیڈن انتظامیہ نے سعودی عرب کو جارحانہ اسلحہ نہ بیچنے کی پالیسی اختیار کی ہوئی تھی — فوٹو: فائل
ڈیفنس میزائل سسٹم کی فراہمی کا اعلان امریکی صدر جوبائیڈن کے دورہ سعودی عرب کے بعد کیا گیا ہے جبکہ اس سے قبل بائیڈن انتظامیہ نے سعودی عرب کو جارحانہ اسلحہ نہ بیچنے کی پالیسی اختیار کی ہوئی تھی — فوٹو: فائل

امریکی وزارت خارجہ نے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کو میزائل ڈیفنس سسٹم کی فروخت کی منظوری دے دی ہے۔

امریکا کی جانب سے سعودی عرب کوپیٹریاٹ میزائل جبکہ، یو اے ای کو ٹرمینل ھائی الٹیٹیوڈ ایریا ڈیفنس (تھاڈ) میزائل سسٹم دینے کی منظوری دی گئی ہے۔

پینٹاگون کے مطابق ڈیل کے تحت سعودی عرب کو 5.3 ارب ڈالرکے 300 پیٹریاٹ میزائلوں سمیت مطلوبہ اوزار اور ٹیکنیکل سپورٹ فراہم کی جائے گی۔

متحدہ عرب امارات کو 2.25 ارب ڈالر کے 96 تھاڈ میزائل، مطلوبہ اوزار، اسپیر اور ٹینکینل سپورٹ فراہم کی جائے گی۔

ڈیفنس میزائل سسٹم کی فراہمی کا اعلان امریکی صدر جوبائیڈن کے دورہ سعودی عرب کے بعد کیا گیا ہے جبکہ  اس سے قبل بائیڈن انتظامیہ نے سعودی عرب کو جارحانہ اسلحہ نہ بیچنے کی پالیسی اختیار کی ہوئی تھی تاہم اس ڈیل کے بعد خیال کیا جا رہا ہے کہ بائیڈن انتظامیہ نے اپنی یہ پالیسی واپس لے لی ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM