پاکستان
06 اگست ، 2022

کراچی: سرکاری کالجوں میں داخلے کیلئے جاری فہرست میں غلطیوں کا انکشاف

17 سرکاری کالجوں میں بغیرکسی وجہ کمپیوٹر سائنس کے داخلے دیےگئے جو کالجوں کی داخلہ پالیسی کے معیار کو ختم کرنے کے مترادف ہے:کالج پرنسپلز۔فائل فوٹو
17 سرکاری کالجوں میں بغیرکسی وجہ کمپیوٹر سائنس کے داخلے دیےگئے جو کالجوں کی داخلہ پالیسی کے معیار کو ختم کرنے کے مترادف ہے:کالج پرنسپلز۔فائل فوٹو

کراچی: سرکاری کالجوں میں داخلے کے لیے جاری فہرست میں غلطیوں کا انکشاف ہوا ہے۔

داخلہ فہرست میں غلطیوں پر کالجز پرنسپلز نے محکمہ تعلیم سندھ کو خط لکھ کر تحریری طور پر احتجاج بھی کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ شہر کے سرکاری کالجوں سے ہیومینیٹیز  فیکلٹی ختم کردی گئی اور  متعلقہ کالجز میں طالبات کے داخلے بھی روک دیے گئے ہیں۔

  کالج پرنسپلز کا محکمہ تعلیم سندھ کو لکھے گئے خط میں مزید کہنا ہے کہ 17سرکاری کالجز میں بغیرکسی وجہ کمپیوٹر سائنس کے داخلے دیےگئے جو کالجوں کی داخلہ پالیسی کے معیار کو ختم کرنے کے مترادف ہے۔

دوسری جانب صوبائی وزیر  تعلیم کا کہنا ہے کہ بچوں کی زیادہ تعداد کمپیوٹر سائنس میں بڑھ رہی ہے، اس سال کمپیوٹر سائنس میں ایک لاکھ 30 ہزار بچے داخلہ لیں گے، اس کے علاوہ وزیر تعلیم نے یہ بھی کہا کہ آرٹس گروپ کو ایوننگ شفٹ میں منتقل کیا ہے ختم نہیں کیا گیا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM