کاروبار
10 اگست ، 2022

یو اے ای کو پاکستان میں سرمایہ کاری پر 25 ارب تک ٹیکس چھوٹ ملنے کا امکان

یو اے ای کی جانب سے سرمایہ کاری پر ٹیکس چھوٹ 3 سے 5 سال تک کے لیے دی جا سکتی ہے: ذرائع ایف بی آر۔ فوٹو فائل
یو اے ای کی جانب سے سرمایہ کاری پر ٹیکس چھوٹ 3 سے 5 سال تک کے لیے دی جا سکتی ہے: ذرائع ایف بی آر۔ فوٹو فائل

متحدہ عرب امارات کو پاکستان میں سرمایہ کاری پر ٹیکس چھوٹ دیے جانے کا امکان ہے۔

ذرائع ایف بی آر کے مطابق سرمایہ کاری پر یو اے ای کو ٹیکس چھوٹ 3 سے 5 سال تک کے لیے دی جا سکتی ہے، مجموعی طور پر 20 سے 25 ارب روپے تک کی ٹیکس چھوٹ دیے جانے کا امکان ہے۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ پاکستان کی جانب سے درآمدی مشینری، درآمدی پارٹس اور انکم ٹیکس چھوٹ دیے جانے کا امکان ہے اور ٹیکس چھوٹ دینے سے متعلق تجاویز تیاری کے ابتدائی مراحل میں ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ یو اے ای کی جانب سے ہیلتھ کیئر، زرعی شعبے اور انرجی انفرااسٹرکچر میں سرمایہ کاری کی جائے گی۔ اس کے علاوہ گیس، ڈیجیٹل کمیونیکیشن اور متبادل انرجی کے ذرائع میں بھی سرمایہ کاری کی جائے گی۔

یو اے ای مجموعی طور پر پاکستان میں ایک ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گا اور اس حوالے سے گزشتہ روز وزیراعظم شہباز شریف نے متحدہ عرب امارات کے صدر کو فون کر کے ان کا شکریہ بھی ادا کیا تھا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM