Election 2024 Election 2024

دنیا
Time 09 دسمبر ، 2023

نیو یارک ٹائمز کے سابق بیورو چیف کا دنیا سے اسرائیلی مظالم کیخلاف کھڑا ہونیکا مطالبہ

ہم سب کا فرض ہے کہ فلسطینی عوام کے حقوق اور تحفظ کا خیال رکھا جائے اور نسل کشی کی اس مہم کو روکنے کیے ہر ممکن کوشش کی جائے: سابق بیورو چیف نیو یارک ٹائمز مشرق وسطیٰ۔ فوٹو فائل
ہم سب کا فرض ہے کہ فلسطینی عوام کے حقوق اور تحفظ کا خیال رکھا جائے اور نسل کشی کی اس مہم کو روکنے کیے ہر ممکن کوشش کی جائے: سابق بیورو چیف نیو یارک ٹائمز مشرق وسطیٰ۔ فوٹو فائل

نیو یارک ٹائمز مشرق وسطیٰ کے سابق بیورو چیف کرس ہیجز (CHRIS HEDGES) نے دنیا بھر کے لوگوں سے غزہ میں اسرائیل کے مظالم کے خلاف کھڑے ہونے کا مطالبہ کیا ہے۔

سابق بیورو چیف نیو یارک ٹائمز نے کہا جو کچھ غزہ میں دیکھ رہے ہیں وہ فلسطین کی تاریخ میں بدترین ہے، غزہ میں ہونے والی نسل کشی کو ریکارڈ نہیں بلکہ رپورٹ کیا جائے۔

کرس ہیجز نے مزید کہا کہ ہم سب کا فرض ہے کہ فلسطینی عوام کے حقوق اور تحفظ کا خیال رکھا جائے اور نسل کشی کی اس مہم کو روکنے کیے ہر ممکن کوشش کی جائے۔

دوسری جانب امریکا نے متحدہ عرب امارات کی جانب سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں غزہ میں جنگ بندی سے متعلق قرار داد کو ایک بار پھر ویٹو کر دیا۔

سلامتی کونسل کے 15 میں سے 13 اراکین نے غزہ میں جنگ بندی کی قرارداد کے حق میں ووٹ ڈالا، امریکا نے قرارداد کی مخالفت کی جبکہ برطانیہ ووٹنگ سے غیر حاضر رہا۔

فلسیطنی مزاحمتی نتظیم نے امریکا کی جانب سے جنگ بندی کی قرارداد کو ویٹو کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ امریکا نے غیر اخلاقی اور غیر انسانی مؤقف اپنایا، امریکا نے ہمارے لوگوں کی نسل کشی میں اسرائیل کی مددکی ہے۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے اپنے بیان میں کہا کہ حماس کی کارروائیاں کبھی بھی فلسطینی عوام کی اجتماعی سزا کا جواز نہیں بن سکتیں، غزہ میں کوئی جگہ محفوظ نہیں، غزہ کے لوگ بقا کی تلاش میں ایک سے دوسری جگہ منتقل ہو رہے ہیں، غزہ میں انسانی بحران کا سنگین خطرہ لاحق ہے لہذا غزہ میں انسانی ہمدردی کی بنیاد پرفوری جنگ بندی کی جائے۔

یاد رہے کہ غزہ میں 7 اکتوبر سے جاری اسرائیلی حملوں میں ان تک 17 ہزار 500 کے قریب افراد شہید اور 40 ہزار سے زائد زخمی ہو چکے ہیں۔

مزید خبریں :